fbpx

ماہرہ خان کے ساتھ کام کیا تو وہ میری بڑی بہن ہی بن سکتی ہیں دانیال ظفر

پاکستان کے عالمی شہرت یافتہ اداکار و گلوکار علی ظفر کے چھوٹے بھائی دانیال ظفر جو خود بھی گلوکار ہیں نے حال ہی میں اداکارہ ماہرہ خان کی ویب سیریز ’’بارہواں کھلاڑی‘‘ میں اداکاری کی ہے-

باغی ٹی وی : دانیال ظفر کے حال ہی میں نجی چینل سے نشر ہونے والے ان کے ڈرامے ’’تانا بانا‘‘ کو شائقین کی جانب سے پسند کیا جارہا ہے۔ اس کے علاوہ وہ ماہرہ خان کی پروڈکشن میں بننے والی پہلی ویب سیریز’’بارہواں کھلاڑی‘‘ میں بھی مرکزی کردار ادا کررہے ہیں۔

برطانوی خبررساں ادارے انڈیپنڈنٹ اردو کو دئیے گئے انٹرویو میں دانیال ظفر نے ’’بارہواں کھلاڑی‘‘ میں اپنے کردار کے بارے میں بتایا کہ ویب سیریز میں وہ ایک کرکٹر کا کردار ادا کررہے ہیں اور وہ خود بارہویں کھلاڑی ہیں ان کے مقابل اداکارہ کنزیٰ ہاشمی مرکزی کردار ادا کررہی ہیں۔

دانیال ظفر سے جب پوچھا گیا کہ کیا وہ ماہرہ خان کے ساتھ اداکاری کرنے کی خواہش رکھتے ہیں تو انہوں نے جواب دیا اگر وہ اور ماہرہ خان ایک ساتھ کام کریں بھی تو ماہرہ کے ساتھ ان کا کردار کیا ہوسکتا ہے وہ یا تو ان کی بڑی بہن بن سکتی ہیں یا اس قسم کا کوئی دوسرا کردار۔

بعد ازاں انہوں نے ہنستے ہوئے ماہرہ خان سے معذرت کرتے ہوئے کہا کہ تین چار سال بعد ایسا ممکن ہوسکتا ہے جب وہ عمر میں کچھ بڑے ہوجائیں گے دانیال نے کہا ان کی خواہش ضرور ہے کہ ماہرہ خان کے ساتھ کام کریں۔

دانیال ظفر نے بتایا کہ ان کا ماہرہ خان کے ساتھ کام کرنے کا پہلا تجربہ بطور اداکارہ نہیں بلکہ پروڈیوسر کی حیثیت سے ہوا ہے تو جب بھی ان سے کردار یا کہانی کے بارے میں بات ہوئی تو وہ ہمیشہ پرجوش رہیں اور اسکرپٹ پر وہ خود بھی کام کرتی رہی ہیں تاکہ بہتر نتائج مل سکیں۔

دانیال نے بتایا کہ انہوں نے پہلے کبھی کرکٹ نہیں کھیلی لہذا اس کردار کے لیے انہوں نے اپنے کزن سے مدد لی اور اپنے بڑے بھائی علی ظفر سے بھی سیکھنے کا موقع ملا۔

بارہواں کھلاڑی کے ہدایت کار عدنان سرور کے بارے میں ان کا کہنا تھا کہ کھیلوں پر فلمیں نہ ہونے کے برابر ہیں اور عدنان کے نام پر ’شاہ‘ جیسی فلم ہے جو انتہائی کم بجٹ میں بنائی گئی تھی عدنان نے کئی مرتبہ انہیں کام کرنے کی مکمل آزادی دی جو بہت کم ہوتا ہے۔

دانیال نے کہا کہ وہ 12 سے 15 گانوں پر کام کررہے ہیں، جنھیں وہ اس پراجیکٹ کے بعد مکمل کریں گے۔

دانیال ظفر نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ وہ اداکاری اور گلوکاری میں سے گلوکاری کا انتخاب کریں گے اور اس بارے میں ان کے ذہن میں کوئی ابہام نہیں کیونکہ ان کے دل سے تو موسیقی ہی نکلتی ہے۔

اداکار و گلوکار کا مزید کہنا تھا کہ انہیں اداکاری کرتے ہوئے زیادہ وقت نہیں ہوا اس لیے ممکن ہے کہ کچھ عرصے کے بعد وہ اداکاری کے بارے میں یہ کہہ سکیں، لیکن فی الحال وہ گلوکاری ہی کو بہتر جانتے ہیں۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.