fbpx

ماحولیاتی منظوری کے بغیر مارگلہ ایونیو کی تعمیر کیس پر فیصلہ محفوظ

اسلام آباد ہائیکورٹ نے ماحولیاتی منظوری کے بغیر مارگلہ ایونیو کی تعمیر کیس پر فیصلہ محفوظ کر لیا

شہریوں نے مارگلہ ہلز نیشنل پارک کے ساتھ مارگلہ ایونیو کی تعمیر کو چیلنج کیا مارگلہ ایونیو کی تعمیر پہلے شروع کی ماحولیاتی منظوری کی درخواست بعد میں کی گئی، جسٹس عامر فاروق نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ اگر ماحولیاتی منظوری نہ ہوئی تو مارگلہ ایونیو منصوبے کا مستقبل کیا ہوگا؟ وکیل سی ڈی اے نے کہا کہ مارگلہ ایونیو پیکج ون 2012 سے جاری، 50 فیصد کام مکمل ہوچکا، وائلڈ لائف بورڈ نے کہا کہ مارگلہ ہلز نیشنل پارک کے محافظ ہم ہیں ،ہمیں کسی نے نہیں پوچھا، سی ڈی اے حکام نے عدالت میں کہا کہ مارگلہ ایونیو پیکج ون پر کوئی گھر ہے نہ ہی کوئی درخت،

جسٹس عامر فاروق نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ ماحول پر کوئی بھی درخواست دے سکتا ہے،صرف درخت ماحول نہیں،جنگلی حیات کا تحفظ، آلودگی، ہر چیز ماحول کے جائزے میں آتی ہے،

میرا کچرا،میری ذمہ داری،برطانوی ہائی کمشنر ایک بار پھر مارگلہ کی پہاڑیوں پر پہنچ گئے

وزیراعظم کی رہائشگاہ بنی گالہ کے قریب کسی بھی وقت بڑے خونی تصادم کا خطرہ

مارگلہ کے پہاڑوں پر قبضہ،درختوں کی کٹائی جاری ،ادارے بنے خاموش تماشائی

سپریم کورٹ کا مارگلہ ہلز میں مونال ریسٹورنٹ کے حوالہ سے بڑا حکم

مارگلہ ہلز ، درختوں کی غیرقانونی کٹائی ،وزارت موسمیاتی تبدیلی کا بھی ایکشن