fbpx

ملائیشیا میں سزائے موت ختم کرنے کا اعلان

کواللمپور:ملائشیا میں سزائے موت ختم کرنے کا اعلان،اطلاعات کے مطابق سرائے موت ختم کرنے کے حوالے سے ملائیشیا نے تصدیق کی ہے کہ وہ لازمی سزائے موت کو ختم کر دے گا، جو اس وقت قتل اور "دہشت گردی” سمیت متعدد جرائم میں استعمال ہوتی ہے، اور مناسب سزا کا فیصلہ کرنے کے لیے ججوں کواختیارات دے دیئے گئے ہیں

عراق:اسرائیل سے تعلق ثابت ہونے پر سزائے موت دینے کا فیصلہ

ملائشیاکے وزیر قانون وان جنیدی توانکو جعفر نے ایک بیان میں کہا کہ سزائے موت کا قانون ختم کرنے کے حوالے سے دی گئی تجاویز کے بعد حکومت اب ان 11 جرائم کے لیے مجوزہ متبادل سزاؤں پر غور کرے گی جن میں لازمی سزائے موت ہے۔ اس کے علاوہ یہ 22 دیگر جرائم میں سزائے موت کے استعمال پر بھی غور کرے گا۔

عدالت نے 10سالہ بچے کے اغواء اورقتل کے مجرم کو سزائے موت سنادی

ملائشیاکے وزیر قانون وان جنیدی توانکو جعفر نے کہا، "یہ حکومت کے تمام فریقوں کے حقوق کی حفاظت اور ضمانت کو یقینی بنانے پر زور دکھاتا ہے۔”ملائیشیا نے سزائے موت کے خاتمے کی جانب اپنا پہلا قدم اکتوبر 2018 میں قلیل المدت پاکاتن ہراپن حکومت کے دوران اٹھایا، اور اس وقت سے ملک میں‌ پھانسیوں پر پابندی ہے۔

81 افراد کو سزائے موت: ایران نے سعودی عرب کیساتھ مذاکرات ملتوی کر دیئے

مقامی میڈیا رپورٹس کے مطابق 1,300 سے زیادہ لوگ سزائے موت کے منتظر ہیں، جن میں سے زیادہ تر منشیات کے جرائم میں سزائے موت کا سامنا کر رہے ہیں۔ اقوام متحدہ کے ماہرین نے کہا ہے کہ جن ممالک میں سزائے موت برقرار ہے انہیں اسے صرف "سنگین ترین جرائم” کے لیے استعمال کرنا چاہیے۔