مناواں انویسٹی گیشن پولیس کی ایک اور بڑی کاروائی

مناواں انویسٹی گیشن پولیس کی کاروائی۔ لیڈی پولیو ورکر کو قتل کرنے والا اس کا ساتھی عابد علی گرفتار
ملزم نے مقتولہ بشریٰ کو کزن کی ملازمت کے لیے بطور رشوت دیئے گئے پیسوں کی واپسی کے مطالبہ پر قتل کیاتھا

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق مناواں انویسٹی گیشن پولیس نے چند روز قبل اغواء کے بعد قتل ہونیوالی لیڈی پولیو ورکر کے اندھے قتل کی واردات میں ملوث درندہ صفت ملزم عابد علی کو گرفتار کر لیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق لاہور انویسٹی گیشن پولیس کی سپیشل ٹیمیں جرائم پیشہ افراد کی سرکوبی، انہیں جڑ سے اکھاڑ پھینکنے اور انہیں قانون کے کٹہرے میں لا کر کیفر کردار تک پہنچانے کے لیے دن رات سر گرم عمل ہیں۔انویسٹی گیشن پولیس مناواں کے سب انسپکٹرناصر خان نے اپنی ٹیم کے ہمراہ پیشہ وارانہ مہارت اور جدید ٹیکنالوجی کی مدد سے تقریباً ایک ماہ قبل مناواں کے علاقے میں 24سالہ لیڈی پولیو ورکر بشریٰ کو اغواء کے بعد قتل کرنے کی واردات میں ملوث اس کے ساتھی ملزم عابد علی کوگرفتار کر لیا ہے۔یہ امر قابل ذکر ہے کہ ملزم عابد علی خود بھی پولیو ورکر ہے اور مقتولہ کے ساتھ ہی کام کرتا تھا جس نے مقتولہ کے کزن کو ملازمت پر رکھوانے کے لیے بطور رشوت 40ہزار روپے لے رکھے تھے۔ جب ملزم مقتولہ کے کزن کو بھرتی نہ کروا سکا تو مقتولہ نے رقم کی واپسی کا مطالبہ کر دیا۔ جس پر ملزم نے مقتولہ کو رقم کی واپسی کے لیے بلایا اوراسے قتل کرنے کی نیت سے نشہ آور گولیاں کھلا کر بے ہوش کر دیا اوربیہوشی کی حالت میں گلے میں پھندا ڈال کر قتل کر دیا۔ملزم نے لیڈی پولیو ورکر کی نعش کو رینٹ پر لی گئی مہران کار میں ڈالا اور رات کی تاریکی میں BRBنہر میں پھینک دیا اور فرار ہو گیا۔مقتولہ بشریٰ کی نعش پانی کے بہاؤ میں بہہ گئی جو بعد ازاں تھانہ صدر قصور کے علاقے سے ملی۔ ایس پی انویسٹی گیشن کینٹ محمد عاصم نے اندھے قتل کی واردات کو ٹریس کر کے ملزم کی گرفتاری پر پولیس ٹیم کو شاباش دی گئی

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.