fbpx

خورشید شاہ کا داسوڈیم منصوبے میں مقامی ملازمتوں کا کوٹہ 100 فیصد کرنے کا اعلان

وفاقی وزیر آبی وسائل خورشید شاہ نے داسو ڈیم متاثرین کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ چیئرمین واپڈا سے کہا ہے چھوٹی ملازمتیں 100 فیصد مقامی لوگوں کودی جائیں

وفاقی وزیر سید خورشید شاہ نے داسوڈیم منصوبے میں مقامی ملازمتوں کا کوٹہ 100 فیصد کرنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ کوہستان کے لیے ایک ارب روپے کی ترقیاتی گرانٹ اسی بجٹ میں رکھی جائے گی کوہستان کی ہر تحصیل میں ٹیکنیکل کالج قائم ہو گا، صحت کا نظام بہتر بنایا جائے گا،کوہستان کی ہر تحصیل میں بی آئی ایس پی،نادرا کے دفاتر قائم ہوں گے، اسلام آباد میں ایک اجلاس صرف کوہستان کے مسائل پر ہی رکھوں گا بجٹ کے بعد کوہستان عملی اقدامات کر کے آؤں گا،

قبل ازیں وفاقی وزیرِ آبی وسائل خورشید شاہ نے داسو ڈیم پراجیکٹ سائٹ کا دورہ کیا ہے اور منصوبے کا فضائی جائزہ بھی لیا ہے۔اس موقع پر چیئرمین واپڈا نوید اصغر چوہدری، پیپلز پارٹی کے مرکزی انفارمیشن سیکرٹری فیصل کریم کنڈی و دیگر حکام ان کے ہمراہ تھے۔

وفاقی وزیر آبی وسائل خورشید شاہ کو داسو ڈیم پراجیکٹ سائٹ پربریفنگ میں بتایا گیا کہ داسو منصوبے پر کام کی رفتار مارچ سے تیز ہوئی ہے منصوبے کی مجموعی لاگت 510 ارب ہے منصوبے کی لاگت بڑھنے کی توقع ہے سمبر تک پانی کی دونوں ڈائیورشنز ٹنل مکمل ہو جائیں گی جس کے بعد مین ڈیم کی تعمیر شروع ہو گیا اس وقت منصوبے تک رسائی کی سڑکوں پر کام تیزی سے مکمل ہو رہا ہے منصوبے کا پاور ہاؤس ایک کلومیٹر انڈر گرائونڈ ہے جس کی کھدائی تقریبا ًمکمل ہو چکی ہے مین ڈیم کی تکمیل مئی 2026 تک مکمل کرنے کا ہدف ہے بجلی کی پیداوار کے پہلے تین یونٹ جون 2026 تک شروع ہونے کا ہدف ہے بجلی کی مکمل پیداوار جنوری 2027 تک شروع کرنے کا نظرثانی شدہ ہدف ہے یہ منصوبہ پہلے 2023 تک مکمل ہونا تھا۔داسو ڈیم منصوبے میں تاخیر کی بڑی وجہ لینڈ ایکوزیشن بروقت نہ ہونا ہے داسو ڈیم 4320 میگا واٹ کا منصوبہ ہے بھاشا ڈیم بننے کے بعد داسو ڈیم سے بجلی پیداوار 5400 میگا واٹ تک لے جا سکتے ہیں

ڈیموں کے مخالفین پاکستان کے دشمن ہیں: سابق چیئرمین واپڈا انجینئر شمس الملک

ڈیم مخالف مہم بے نقاب ، ہم نے مقامی لوگوں کو ڈیم کے خلاف بھڑکایا، بھارتی جنرل کا اعتراف

سینیٹ اجلاس میں کالا باغ ڈیم کی تعمیر بارے رپورٹ پیش ہونے پر اپوزیشن کا احتجاج

سپریم کورٹ میں کالا باغ ڈیم کا تذکرہ،عدالت نے کیا دیئے ریمارکس؟

کالا باغ ڈیم ضروری،نئے ڈیمز نہ بنے تو صوبے آپس میں لڑتے رہیں گے ،چیئرمین ارسا

عدالت کیا کرے جو ڈیم بنا رہے ہیں وہی ان معاملات کو دیکھیں گے،سپریم کورٹ

بھارتی آبی جارحیت،پاکستان کا پانی روکنے کے منصوبہ کی دی مودی سرکار نے منظوری