مقبوضہ کشمیر پر انوپم کھیر کو مودی سرکار کی حمایت کرنا مہنگا پڑ گیا

بھارت کے معروف اداکار انوپم کھیر کو مقبوضہ کشمیر کی آئینی حیثیت ختم کرنے کے نریندن مودی کے فیصلے کی حمایت کرنے پر سوشل میڈیا صارفین نے آڑے ہاتھوں لے لیا۔

اداکار انوپم کھیر کو اس وقت شدید تنقید کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے. انہوں نے مقبوضہ کشمیر کو حاصل نیم خود مختاری اور خصوصی حیثیت کو ختم کرنے کے مودی سرکار کے آرٹیکل اے اور 370 کی خلاف ورزی کر کے متعصبانہ عمل کو مسئلہ کشمیر کا حل قرار دیا۔

سوشل میڈیا صارفین نے انوپم کھیر پر شدید تنقید کرتے ہوئے اقوام متحدہ کی قرارداد یاد دلائی جس میں مقبوضہ کشمیر کے عوام کو حق خود ارادیت دینے کا وعدہ اور بھارت کو ووٹنگ کرانے کا حکم دیا گیا تھا۔

انوپم کھیر کو ٹویٹر پر کئی صارفین نے جواب دیتے ہوئے اقوام متحدہ کو بھی ٹویٹ میں مینشن کیا جب کہ دیگر صارفین نے تاریخی حقائق، معلومات کی کمی اور حالات سے بے خبری پر انوپم کھیر کا خوب مذاق بھی اُڑایا.

ایک صارف نے ان کو جواب دیتے ہوئے اقوام متحدہ کو مینشن کیا اور سوال اُٹھایا کہ کیا اقوام متحدہ کے بھارت سے تعلق رکھنے والے سفیر صرف نفرت اور پروپیگنڈے کو فروغ دیتے ہیں اور معصوم نہتے شہریوں کے قتل عام کا جواز پیش کرتے ہیں؟

واضح رہے کشمیر میں مسلمانوں پر ظلم کی انتہا بڑھتی جا رہی ہے اور کشمیری مدد کے لیے پکار رہے ہیں. بھارت میں مسلمانوں کا رہنا انتہائی مشکل ہو گیا ہے. بھارت کی جانب سے کلسٹر بم کا استعمال اپنے معاہدوں کی کھلم کھلا خلاف ورزی ہے.

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.