ورلڈ ہیڈر ایڈ

مریم نواز کو نواز شریف کے ساتھ جانے دیا جائے گا یا نہیں؟ کیا فیصلہ ہوا؟

مریم نواز کو نواز شریف کے ساتھ جانے دیا جائے گا یا نہیں؟ کیا فیصلہ ہوا؟ اہم خبر

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق ترجمان وزارت داخلہ نے کہا ہے کہ وزارت داخلہ کو شہبازشریف کی جانب سے 8 نومبر کو نواز شریف کا نام صحت کی ناسازی اور بیرون ملک علاج کے لئے ای سی ایل سے نکالنے کی درخواست موصول ہوئی، وزارت داخلہ اپنی سفارش تمام حقائق اور متعلقین کے موقف سامنے رکھ کر مجاز اتھارٹی کے سامنے رکھے گی۔

نواز شریف کے ساتھ کتنے میں ڈیل ہوئی؟ مریم نواز کو جانے دیا جائیگا یا نہیں؟ شیخ رشید نے بتا دیا

جمعہ کو ایک بیان میں ترجمان نے کہا کہ وزارت داخلہ نے یہ معاملہ نیب کو ریفر کیا ہے۔ شریف خاندان کی جانب سے نیب کو بھی درخواست کی گئی ہے۔ شریف میڈیکل سٹی لاہور سے نواز شریف کی صحت کی رپورٹ طلب کر کے میڈیکل بورڈ سے ان کاموقف حاصل کرنے کے لیے دے دی گئی ہے۔

نواز شریف بیرون ملک روانگی کیلئے تیار، بکنگ ہو گئی، مریم کی جگہ ساتھ کون جائے گا؟

ترجمان کا مزید کہنا تھا کہ درخواست کی حساس نوعیت کو مدنظر رکھتے ہوئے وزارت داخلہ کی جانب سے تمام ضروری اقدامات بر وقت لئے گئے ہیں۔ وزارت داخلہ اپنی سفارش تمام حقائق اور متعلقین کے موقف سامنے رکھ کر مجاز اتھارٹی کے سامنے رکھے گی۔

نواز شریف کی طبیعت کیسی؟ کہاں سے علاج کروانا چاہتے ہیں، مریم نے اظہار کر دیا

دوسری جانب حکومت نے سابق وزیراعظم نوازشریف کانام ای سی ایل سے ہٹانےکا فیصلہ کیا ہے، شریف خاندان کو نواز شریف کانام ای سی ایل سے ہٹانے کے فیصلے سے آگاہ کردیا گیا،حکومت نوازشریف کے علاج میں رکاوٹ نہیں بننا چاہتی، نواز شریف کی بیرون ملک روانگی کی تیاریاں شروع کر دی گئیں،نوازشریف کا نام آئندہ 48 گھنٹوں میں ای سی ایل سے ہٹائے جانے کا امکان ہے، فیصلے کی باضابطہ ہدایات کا وزارت داخلہ میں انتظارکیا جارہا ہے

ن لیگی رہنماؤں کی عدالت میں پیشی، مریم نواز کے شوہر کو پولیس نے کیا کہا؟

مریم نواز کو کٹہرے میں لایا جائے، عدالت کا حکم

اہل یا نااہل ، مریم نوز کو ایک اور موقع مل گیا

حلال کی کمائی ہے، 5 ٹکے بھی ان کو نہ دیں، کیپٹن ر صفدر کا دعویٰ

نواز شریف کا نام نیب کی درخواست پر ای سی ایل میں ڈالا گیا تھا جب کہ کچھ روز قبل وفاقی وزیر داخلہ اعجاز شاہ نے عندیہ دیا تھا کہ اگر ڈاکٹرز نے نواز شریف کا بیرون ملک علاج ناگزیر قرار دیا تو راستہ نکل سکتا ہے۔

وزیراعظم عمران خان کی مشیر برائے اطلاعات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان کا کہنا ہے کہ نوازشریف اورمریم نوازکے معاملےکوانسانی ہمدردی کی بنیاد پردیکھیں گے، ابھی تک مریم نوازکی جانب سےکوئی درخواست نہیں آئی،مریم نوازبارے عدالتی فیصلے کی روشنی میں ترجیحات طے کریں گے،میڈیکل بورڈ کی رائے اہم ہے ، مریم نواز کوسہولت دینے کا فیصلہ عدالتی فیصلے سے جڑا ہے، نوازشریف کوعدالتی فیصلے کے تناظرمیں سہولت دی جائے گی،

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.