fbpx

مریم اورنگزیب ارشد شریف کی والدہ کے پاس تعزیت کے لئے پہنچ گئیں

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق وفاقی وزیر اطلاعات مریم اورنگزیب ارشد شریف کی والدہ کے پاس تعزیت کے لئے پہنچ گئیں

اس موقع پر میڈیا سے بات کرتے ہوئے وفاقی وزیر اطلاعات مریم اورنگزیب کا کہنا تھا کہ سنئر صحافی ارشد شریف کی وفات کا واقعہ انتہائی افسوسناک ہے۔ارشد شریف کا مبینہ قتل افسوسناک، دل دہلا دینے والا واقعہ ہے،ارشد شریف کی وفات پر سیاست کرنا گناہ کے زمرے میں آتا ہے کینیا کی حکومت سے تفتیشی رپورٹ آنا ضروری ہے۔ خرم احمد نامی شخص ارشد شریف کی گاڑی ڈرائیو کر رہا تھا،افسوسناک واقعے پر سیاست کرنا غلط ہے، وزیراعظم نے وزارت داخلہ اور خارجہ کو معاملے کی مکمل تحقیقات کا حکم دیا۔

قبل ازیں تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے بھی ارشد شریف کے گھر کا دورہ کیا اور اہلخانہ سے اظہار تعزیت کی،

وفاقی وزیر برائے انسداد منشیات نوابزادہ شاہ زین بگٹی نے سینئر صحافی ارشد شریف کے انتقال پر تعزیت کا اظہار کیا ہے ۔ ارشد شریف کے انتقال پردلی دکھ اور افسوس ہوا انہوں نےغمزدہ خاندان سے دلی ہمدردی کا اظہار کرتے ہوئے دعا کی کہ الله تعالی مرحوم کے درجات بلند فرمائے اور غمزدہ خاندان کو صبر جمیل عطافرمائے،آمین

واضح رہے کہ کینیا میں پولیس کی فائرنگ سے ارشد شریف کی موت ہوئی ہے، وزیراعظم، صدر مملکت سمیت سیاسی شخصیات نے ارشد شریف کی موت پر اظہار افسوس کیا ہے، نیشنل پریس کلب اسلام آباد نے ارشد شریف کی موت پر تین روزہ سوگ کا اعلان کیا ہے

ایک بیٹا شہید،خواہش ہے دوسرے کو بھی اللہ شہادت دے،پاک فوج کے شہید جوانوں کے والدین کے تاثرات

شہادت سے سات ماہ پہلے بیٹے کی شاد ی کی تھی،والدہ کیپٹن محمد صبیح ابرار شہید

ارشد شریف کی موت پر وزیراعظم، صدر مملکت کا اظہار افسوس

اسلام آباد ہائیکورٹ کاسیکرٹری داخلہ و خارجہ کو ارشد شریف کے اہلخانہ سے رابطے کا حکم

‏ارشد شریف کو گولی کیسے لگی؟ حقائق سامنے آ گئے

ارشد شریف کی موت،قیاس آرائیوں سے گریز کیا جائے،وفاقی وزیر اطلاعات