fbpx

جادو ٹونہ کے ذریعے ملک چلا رہے جنترمنتر سے پٹرول اور آٹا سستا کیوں نہیں کرتے؟ مریم

جادو ٹونہ کے ذریعے ملک چلا رہے جنترمنتر سے پٹرول اور آٹا سستا کیوں نہیں کرتے؟ مریم
باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق ایون فیلڈ ریفرنس کیس کی سماعت میں پیشی کے لئے نائب صدر مسلم لیگ ن مریم نواز کی اسلام آباد ہائیکورٹ آمد ہوئی ہے

اس موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مریم نواز کا کہنا تھا کہ سوال آپ لوگ کرتے ہیں نیب مجھے چارج شیٹ کرتا ہے، دیکھنا چاہتی ہوں نیب میں میرا ہمدرد کون ہے،نیب عدالت سے درخواست کرتا ہے کہ میری ضمانت منسوخ کریں ضمانت منسوخی درخواست کامعاملہ عدالت طے کرے گی نیب کہتا ہے کہ میں یہاں آ کر سلام کیوں کرتی ہوں،صحافی نے سوال کیا کہ ضمانت منسوخی کی پٹیشن پر کیا کہیں گی، جس پر مریم نواز نے کہا کہ ججز بتائیں گے کہ اس کر کیا کرنا ہے،

پولیس نے مریم نواز کو میڈیا سے مزید غیر رسمی گفتگو سے روک دیا، مریم نواز کی عدالت پیشی کے موقع پر ن لیگی کارکنان کی بڑی تعداد موجود تھی،مریم نواز کی کمرہ عدالت آمد ہوئی تو لیگی رہنماؤں نے مریم نواز کو سلام کیا ،ن لیگی رہنماؤں حنیف عباسی ، ملک ابرار ، میاں جاوید لطیف نے مریم نواز کا استقبال کیا مریم نواز نے لیگی رہنماؤں سے حال احوال پوچھا, ترجمان مسلم لیگ ن پنجاب عظمی زاہد بخاری اور حناء پرویز بٹ کو احاطہ عدالت جانے سے روکنے کی کوشش کی گئی

قبل ازیں اسلام آباد ہائی کورٹ میں ایون فیلڈ ریفرنس اپیلیوں پر سماعت شروع ہو گئی،اسلام آباد ہائی کورٹ کا دو رکنی بینچ کیس کی سماعت کر رہا ہے ،جسٹس عامر فاروق اور جسٹس محسن اختر کیانی بینچ میں شامل ہیں،مریم نواز کے وکیل عرفان قادر روسٹرم پر آگئے ،جسٹس عامر فاروق نے کہا کہ آپکی درخواست پر نمبر لگ گیا ہے، وکیل مریم نواز نے کہا کہ جی ہماری درخواست پر نمبر لگ گیا ہے، مریم نواز کی نئی درخواست پر دلائل دینا چاہتا ہوں ، وکیل نے کہا کہ اسلام کہتا ہے بے گناہ شخص کو سزا دینا پوری انسانیت کو سزا دینے کے مترادف ہے، اخبارات میں دیکھا کہ نیب نے مریم نواز کی ضمانت منسوخی کیلئے درخواست دی نیب کی نئی درخواست دیکھی نہیں ہے،یہ کیس میں رکاوٹ ڈالنے کے لیے ہے،معاملہ زیر سماعت ہے اور اب ہماری طرف سے کوئی تاخیر بھی نہیں ہو رہی،میں چاہتا ہوں کہ کیس کا فیصلہ حقائق سن کر میرٹ پر کیا جائے،عدالت کو بتانے کا مقصد نیب کی بدنیتی کی نشاندہی کرنا ہے، جسٹس محسن اختر کیانی نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ درخواست تو ابھی عدالت کے سامنے نہیں ہے اس پر بات نہ کریں، وکیل عرفان قادر نے کہا کہ عدالت ہماری درخواست کو میرٹ پر قابل سماعت ہونے کا فیصلہ دے،یہ وہ حقائق ہیں جو ہم عدالت کے ریکارڈ پر لائے ہیں، درخواست میں پولیٹیکل انجینئرنگ کی بات کی گئی ہے،ایسے واقعات ہوئے جس سے کئی شکوک اور شبہات پیدا ہوئے ہیں، احتساب عدالت کے پاس یہ کیس سننے کا اختیار ہی نہیں تھا یہ وہ کیس ہے جس میں کوئی شواہد موجود نہیں،اس کیس میں قانونی طریقہ کار پر عمل نہیں کیا گیا،یہ کیس بادی النظر میں 561 اے کا معاملہ ہے

جسٹس محسن اختر کیانی نے کہا کہ ہم 561 اے کے معاملے کو الگ کر کے تو نہیں سن سکتے، وکیل نے کہا کہ اگر کیس میں کوئی بھی شکوک وشبہات ہوں تو اس کا فائدہ ملزم کو ہوتا ہے، جہاں شک ہو تو فائدہ ملزم کو جاتا ہے،یہاں تھوڑا نہیں بہت شک ہے،اس کیس کی تمام کارروائی میں غیرقانونیت موجود ہے، جسٹس عامر فاروق نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ درخواست اور اپیل دونوں میں بریت کی استدعا کی گئی ہے، آپ نے مرکزی اپیل اور متفرق درخواست میں ایک ہی گراونڈ لیا ہے،یہ دونوں ساتھ ساتھ ہی سنی جائیں گی ملزمان کی اپیلوں اور درخواستوں پر ایک ساتھ فیصلہ ہو گا، مریم نواز کے وکیل نے کہا کہ اگر ہماری درخواست منظور ہو جاتی ہے تو پھر اپیل پر فیصلے کی ضرورت ہی نہیں،

مریم نواز کے وکیل نے کہا کہ شریف فیملی میں اور بھی لوگ ہیں لندن فلیٹس کی ملکیت پبلک آفس ہولڈر پر ہی کیوں ڈالی گئی نیب اس سوال کا جواب دے ابھی درخواست واپس لے لوں گا، نیب پراسکیوٹرسردار مظفر نے کہا کہ برطانیہ کو لکھے خط کے جواب کیمطابق مریم نواز ہی بینفیشل مالک ہیں، جسٹس عامر فاروق نے کہا کہ پہلے چارج پڑھ لیں کہ کیس میں الزام تھا کیا ؟ مریم نواز کے وکیل نے ریفرنسز کا الزام عدالت کے سامنے پڑھ کر سنایا، مریم نواز کے وکیل نے کہا کہ مریم نواز پر ایون فیلڈ پراپرٹیز کا بینیفشل اونر ہونے کا الزام تھا،کیلبری فونٹ کا بہت مذاق بنا ،بہت باتیں بنیں لیکن اب آپ دیکھیں گے،ٹرسٹ ڈیڈ کی بنیاد پر کہہ دیا گیا کہ مریم نواز بینیفشل اونر ہیں، جسٹس عامر فاروق نے وکیل سے مکالمہ کرتے ہوئے کہا کہ پہلے چارج پڑھ لیں کہ کیس میں الزام تھا کیا ؟ مریم نواز کے وکیل نے کہا کہ سپریم کورٹ، احتساب عدالت، جے آئی ٹی اور نیب سے بڑی غلطی ہوئی،نواز شریف جب سیاست میں آئے اس سے پہلے بھی امیر خاندان تھا،

جسٹس عامر فاروق نے نیب پراسیکیوٹر سردار مظفر سے سوال کیا کہ یہ کمپنیاں کہاں رجسٹرڈ ہیں؟ نیب پراسیکیوٹر نے عدالت میں جواب دیا کہ یہ کمپنیاں بی وی آئی میں رجسٹرڈ ہیں، جسٹس عامر فاروق نے سردار مظفر سے سوال کیا کہ یہ بی وی آئی کیا ہے؟ جس پر نیب پراسیکیوٹر نے عدالت میں بتایا کہ برٹس ورجن آئزلینڈ میں کمپنیز رجسٹرڈ ہیں، جسٹس عامر فاروق نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ مختصرنہیں، واضح بتائیں ہمیں باہر کے ممالک کا زیادہ نہیں پتہ، سردار مظفر نے عدالت میں کہا کہ 2004میں قانون آ گیا کہ آپ یوکے میں کمپنیوں کی ملکیت چھپا نہیں سکتے،مریم نواز کے وکیل نے عدالت میں کہا کہ مریم نواز پبلک آفس ہولڈر نہیں لیکن مستقبل میں بننے کی صلاحیت ہے، مریم نواز پر نواز شریف کی اعانت جرم کا الزام ہے،

جسٹس عامر فاروق نے وکیل سے سوال کیا کہ کیپٹن ریٹائرڈ صفدر پر کیا الزام ہے ؟ وکیل نے عدالت میں کہا کہ کیپٹن ریٹائرڈ صفدر خود روسٹرم پر آکر عدالت کو بتانا چاہتے ہیں ، جس پر جسٹس عامر فاروق نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ نہیں آپ دلائل دیں، کیپٹن ریٹائرڈ صفدر تشریف رکھیں، عرفان قادر نے عدالت میں کہا کہ کیپٹن ریٹائرڈ صفدر کا تو کوئی کردار ہی نہیں لیکن انکو بھی کیس میں شامل کر دیا گیا، کیس میں ٹرائل سے پہلے اور بعد کے اثرات موجود ہیں،ہمیں اداروں کا دفاع کرنا چاہیے ،عدالت کہے گی تو غیرقانونیت بیان کرونگا، یہ ریفرنس چیئرمین نیب نے دائر نہیں کیا، نہ ہی کسی کی شکایت پر دائر ہوا چیئرمین نیب نے ریفرنس دائر کیا تو وہ سپریم کورٹ فیصلے کے مطابق یہ نہیں کرسکتے تھے، عدالت نے سوال کیا کہ سپریم کورٹ نے کوئی آبزرویشن دی تھی یا کوئی فیصلہ تھا؟ مریم نواز کے وکیل نے عدالت میں کہا کہ کیس میں ایسے عجیب غریب حقائق ہیں کہ عدالت ہمیں آج ہی بری کر دے گی،

کیس کی سماعت کے بعد ن لیگی رہنما مریم نواز نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ نیب نے میری ضمانت منسوخی کی درخواست دی ،میں نیب میں اپنے ہمدرد کو دیکھنا چاہتی ہوں، درخواست گزار کا چہرہ قوم کو دکھانا چاہیے،نیب کو جس نے درخواست دی وہ کیا چاہتا ہے ؟درخواست لکھنے والے کو 22توپوں کی سلامی دی جائے،میں گرفتاری سے ڈرتی ہوں نہ ہی جعلی مقدمات سے نیب نے جو درخواست لکھی ہے وہ کس عقلمند نے لکھی ہے؟ درخواست مجھے ڈرانے کے لیے ہے،سچ کو ایک نہ ایک دن سامنے آنا ہے،منتخب وزیر اعظم کو آئین جو حقوق دیتا ہے اس سے کوئی انکار نہیں کرسکتا عمران خان آئینی وزیر اعظم نہیں ہے،عمران خان کے پاس عوامی مینڈیٹ ہے نہ عوام کا ووٹ ہے،جادو ٹونے اور جھاڑ پھونک سے ملک چلایا جارہا ہے،ایک شخص کی وجہ سے ملک کو تماشا بنا دیا گیا ہے، کیا آج آپ کوووٹ کوعزت دو کا نعرہ یاد آیا، نواز شریف منتخب اور آئینی وزیراعظم تھے،نواز شریف کی جدوجہد اس کی ذات کے لیے نہیں تھی، کیا آپ نے قوم کو بے وقوف سمجھ رکھا ہے،ووٹ کو عزت دینے کے لیے جیلیں اور صعوبتیں برداشت کرنا پڑتی ہیں،عمران خان کی سیاسی پہچان اور تعارف منتخب حکومت کے خلاف سازش کرناہے، عمران خان نواز شریف بننے کی کوشش نہ کریں،نواز شریف نے اپنی ذات اور حکومتوں کی قربانی دی ہے،عمران خان کی سیاسی پہچان امپائر کی انگلی ہے، عمران خان کا جمہوریت او ر جمہوری جدوجہد سے کوئی لینا دینا نہیں، عمران خان کو سیاسی شہید نہیں بننے دیا جائے گا،عمران خان کو اپنی نااہلی کا جواب دینا پڑیگا ، عمران خان کو تاریخی قرضوں کا جواب دینا پڑیگا، عمران خان سے پوچھنا چاہتی ہوں ان کا سیاسی تشخص کیا ہے؟ عمران خان کو پاکستان کو پوری دنیا میں رسوا کرنے کا جواب دینا پڑیگا،شیر کی کھال پہننے سے کوئی شیرنہیں بن جاتا،جنترمنتر سے پیٹرول اورآٹا سستا کیوں نہیں کرتے؟ ووٹ کوعزت دوکی خاطرجیل کاٹنی پڑتی ہے ،جلاوطن ہونا پڑتا ہے،ووٹ کوعزت دوکی خاطراٹک قلعہ میں جانا پڑتا ہے ،پی ڈی ایم میں کوئی اختلاف نہیں ہے پی ڈی ایم کی تمام جماعتیں ایک پیج پر ہیں ،میری درخواست میں ہربات واضح ہے، اسلام آباد ہائیکورٹ نیب اورمیر ی درخواست کوساتھ ساتھ لیکر چلنا چاہتی ہے، اپنا موقف واضح کرنے کے لیے ہائیکورٹ میں دوسری درخواست دینا پڑی تو دونگی،عمران خان کی سیاسی پہچان کیا ہے منتخب حکومت کے خلاف سازش کرنا،126 دن دھرنادینا،کہنا میں وزیراعظم کو میں گھسیٹوں کا،ووٹ کی حرمت کو کچلنا یہ ہے عمران خان کی پہچان۔

نواز شریف کی نئی میڈیکل رپورٹ عدالت میں جمع، نواز ذہنی دباؤ کا شکار،جہاز کا سفر خطرناک قرار

جس ڈاکٹر کا سرٹیفیکٹ لگایا وہ امریکہ میں اور نواز شریف لندن میں،عدالت کے ریمارکس

اشتہاری ملزم کی درخواستیں کس قانون کے تحت سن سکتے ہیں،نواز شریف کے وکیل سے دلائل طلب

نواز شریف کی جیل میں طبیعت کیوں خراب ہوئی تھی؟ نئی میڈیکل رپورٹ میں اہم انکشاف

مریم نواز کو بیرون ملک بھجوانے پر حکومت راضی ہو گئی

مریم نواز کی گاڑی پر پتھراؤ، شہباز شریف، بلاول بھی میدان میں آ گئے

تمام گاڑیوں کی فوٹیجز موجود ،پتھراؤ کرنیوالوں کیخلاف کاروائی ہو گی، راجہ بشارت

نیب دفتر کے باہر ن لیگی کارکنان کی ہنگامہ آرائی پر وزیراعلیٰ کا نوٹس، رپورٹ طلب

کیپٹن صفدر کا کورٹ مارشل کرو، اب سب اندرجائیں‌ گے،مبشر لقمان کا اہم انکشاف

مریم نواز عدالت پہنچ گئی

مریم نواز کی گرفتاری کی تیاریاں شروع

دوسروں کی عزت کی دھجکیاں اُڑاؤ ، پگڑیاں اچھالو تو احتساب ہو رہا ہے،مریم اورنگزیب

 

Facebook Notice for EU! You need to login to view and post FB Comments!