مصنوعی دل کے ساتھ زندہ رہنے والی برطانوی خاتون

تصویر میں مسکراتی ہوئی خاتون صلوٰہ حسین ہیں
یہ برطانیہ میں اپنے شوہر کے ساتھ رہتی ہیں ..!
دُنیا میں دل کے بغیر یا مصنوئی دل کے ساتھ زندہ رہنے والی یہ دوسری انسان ہیں ، اور ان کی زندگی میں یہ تبدیلی جب آئی ہے جب انہوں نے اپنے جسم کے اندر مصنوئی دل لگوانے کی ایک ایسی سرجری کروائی تھی ، جو دنیا میں ایک غیر معمولی واقعہ ہے ،
تصویر میں وہ اپنے مصنوعی دل کو ایک بیگ میں اٹھائے ہوئے ہیں ۔ یہ بیگ ان کے ساتھ رہتا ہے ،
جہاں بھی یہ جائیں اور جب تک یہ زندہ ہیں انہیں اس بیگ کے اندر موجود مصنوئی دل کے ساتھ ہی رہنا ہوگا۔
برطانوی اخبار "ڈیلی میل” میں ان کی یہ خبر سب سے پہلے شائع ہوئی کہ 39 سال کی عمر میں صلوہ حسین ہی وہ خاتون ہیں جو برطانیہ میں اس طبی طریقے سے رہتی ہیں۔ وہ دو بچوں کی ماں ہیں ،
ان کے ساتھ موجود بیگ میں ، ایک آلہ ہے جس میں دو بیٹریاں ہیں ، جن کا وزن 6.8 کلو ہے ، جو برقی موٹر اور ہوا کو آگے بڑھانے کے لئے ایک پمپ کا کام کرتا ہے۔
جسم میں خون کی گردش کو برقرار رکھنے کے لئے بیٹریاں ، نلیوں کے ذریعے مریض کے سینے میں پلاسٹک کے تھیلے میں ہوا کو دھکیل دیتی ہیں۔
صلوا ، جب آپ اپنے مصنوعی دل کو ہاتھوں میں لے کر مسکراتی ہیں تو ہمارے سارے مسئلے اور پریشانیاں آپ کی اس ایک مسکراہٹ کے سامنے شرمندہ ہوتے ہیں اور بہت چھوٹے اور کم پڑ جاتے ہیں ۔
کسی بھی تھکاوٹ اور افسردگی کا اظہار کرنے سے لاکھ گنا بہتر ہے کے ہم اللّه کریم کا شکر ادا کرتے رہیں
اللّه کریم کا لاکھ لاکھ شکر ہے کے جس نے ہمیں صحت اور تندرستی دی …
ہمیں ہر حال میں اللّه ربّ العزت کا شکر ادا کرنا چائیے۔
جو نعمتیں اللہ تعالی نے ہمیں عطا کی ہیں ہم انکا شمار تک نہیں کرسکتے

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.