fbpx

مذہبی اور سیاسی رہنماوں کی قوم کو جشن آزادی پر مبارکباد

امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے یوم آزادی کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آج کا دن تاریخی ہے، پاکستان کی صورت میں ہمیں انعام سے نوازا گیا ،اس عظیم ملک کے لیے مسلمان آگ و خون کے دریاوں سے گزرے ،پاکستان کی خاطر لڑنا، جدوجہد کرنا اور بہتری کے لیے کوشش عظیم جہاد ہے .پاکستان زمین کا ٹکرا نہیں، ایک نظریہ ہے.جدوجہد کرکے ملک میں اسلامی نظام لائیں گے ،پاکستان کا بننا معجزہ ہے،65 فیصد پاکستانی نوجوان ہیں ، اعتراف کرنا ہوگا کہ پاکستان میں بہنے والے خون کے ساتھ انصاف نہیں کرسکے ،آج پنجابی، پٹھان یا بلوچی ملے گا لیکن پاکستان چاہتا ہے میرا بھی وجود ہو ،زبان کی بنیاد پر پاکستان کو توڑا گیا،بنگالی قوم نے پاکستان بنانے میں کلیدی کردار ادا کیا،مغربی پاکستان کی اسٹیبلشمنٹ، بیوروکریسی نے بنگلہ دیش بنانے میں کردارادا کیا،یہاں انصاف بکتا ہے، مظلوم پستا ہے
ہمارا فیصلہ آئی ایم ایف کرتا ہے، ہم آزاد نہیں،ہماری قوم نے آنکھیں بند کرکے کشمیریوں کو انڈیا کے رحم و کرم پر چھوڑا ہے،عمران خان کا مطالبہ ہے کہ الیکشن ہو، کس نے روکا ہے
کےپی کے اور پنجاب کی اسمبلی تحلیل کریں ابھی الیکشن ہوجائے گا ،پی ٹی آئی کی حکومت مسلم لیگ کی حکومت کا تسلسل ہے،سابق وزیراعظم نے محمد بن سلمان کے تحفے کو پہننے کی بجائے فروخت کردیا،ایسے چھوٹے کردار اور کمزور حوصلوں کے لوگ 22 کروڑ عوام کی قیادت کے قابل نہیں.

ڈاکٹر طاہر القادری کی 75 ویں یوم آزادی پر اہل پاکستان کو مبارکباد دی،ڈاکٹر طاہر القادری کا کہنا تھا کہ پاکستان کوفلاحی ریاست بنانے کا خواب آج بھی تشنہ تعبیر ہے،ذات اور جماعت کے مفاد سے بالا ہو کر آزادی کی نعمت کی حفاظت کریں،آزادی اللہ کی نعمتوں میں سے ایک بیش قدر نعمت ہے.

پاکستان عوامی تحریک کے زیر اہتمام 75ویں یوم آزادی پر پرچم کشائی کی تقریب منعقد کی گئی، سیکرٹری جنرل خرم نواز گنڈا پور نے مرکزی دفتر میں قومی پرچم لہرایا.راہنما عوامی تحریک کا کہنا تھا کہ کوئی منفی قوت پاکستان کا بال بیکا نہیں کرسکتی، پرچم کشائی کی تقریب میں قومی ترانہ پڑھا گیا، پودے لگائے گئے ،بریگیڈئیر اقبال احمد خان، نور اللہ صدیقی، جواد حامد، سہیل رضا، الطاف حسین شاہ ،مظہر محمود علوی، نعیم الدین چوہدری ایڈووکیٹ، محسن اقبال و دیگر نے شرکت کی. تقریب کے اختتام پر ملکی سلامتی، ترقی و خوشحالی کے لئے دعائیں کی گئی .