علی ظفر اور میشا شفیع کے درمیان دلچسپ نوک جھوک ، علی ظفر نے کمر پر ہاتھ رکھنے والی بات کردی

0
35

لاہور : معروف گلوگار واداکار علی ظفر اور میشا علی کے درمیان دلچسپ گفتگو اور نوک جھوک نے عدالت میں‌دلچسپ صورت حال پیدا کردی ، گلوکار و اداکار علی ظفر نے اداکارہ میشا شفیع کی جانب سے جنسی ہراسگی کا الزام لگانے کے کیس میں عدالت میں جرح کے دوران کہا ہے کہ ’ان کے خیال میں ان کے ساتھ میشا شفیع کو کمر پر ہاتھ رکھ کر تصویر بنوانے میں کوئی دقت نہیں۔

ذرائع کے مطابق میشا شفیع اور علی ظفر کے درمیان ہونے والے تنازعہ قانونی میدان میں شدت اختیار کرگیا ہے ، لاہور کی سیشن کورٹ میں جج امجد شاہ کی سربراہی میں علی ظفر کے بیان پر جرح کے لیے سماعت ہوئی۔

میشا شفیع کے وکیل ثاقب جیلانی کی جانب سے جنسی ہراسگی کے کیسز سے متعلق پوچھے گئے سوال کے جواب میں علی ظفر کا کہنا تھا کہ ان کے خلاف میں جنسی ہراسگی کے تمام کیسز رپورٹ نہیں ہوتے اور یہ کہ وہ خاتون نہیں ہے کہ یہ بتا سکیں کہ خواتین ایسے کیسز کیوں رپورٹ نہیں کرواتیں؟

ذرائع کےمطابق گلوکار واداکار میشا شفیع کے اعتراض کا جواب دیتے ہوئے علی ظفر نے جواب دیا کہ وہ ذاتی طور پر ہاروی وائنسٹن اور ان پر الزام لگانے والی اداکاراؤں کو نہیں جانتے اور نہ ہی انہیں اس بات کا علم ہے کہ خواتین نے شہرت حاصل کرنے کے لیے پروڈیوسر پر جھوٹے الزامات لگائے۔

ذرائع کےمطابق جرح کے دوران علی ظفر نے اعتراف کیا کہ اگرچہ الزامات کے بعد ان کی فلم ’طیفا ان ٹربل‘ کو ناکام بنانے کی کوشش کی گئی، تاہم ان کی فلم نے 50 کروڑ کا بزنس کرنے سمیت ایوارڈز کے لیے نامزدگیاں بھی حاصل کیں۔

Leave a reply