fbpx

مہنگائی کا جن بے قابو،انتظامیہ بے بس

شیخوپورہ(نمائندہ باغی ٹی وی)شیخوپورہ میں ضلعی انتظامیہ کے تمام تر دعوے اور انتظامات دھرے کے دھرے رہ گئے شہر میں اشیاء خوردونوش پھلوں اور سبزیوں کی قیمتیں آسمان چھونے لگیں،ذخیرہ اندوزوں نے مصنوعی قلت پیدا کرکے گراں فروشی کی انتہا کردی
مرغی کا گوشت 400روپے فی کلو تک فروخت ہورہا ہے جبکہ بکرے کے گوشت کے سرکاری نرخ 900روپے فی کلو ہیں مگروہ بھی 1200روپے فی کلو فروخت ہورہا ہے اور بڑا گوشت 600روپے تک فروخت ہورہا ہے، چینی 95سے 100روپے تک فی کلو اور 10کلو آٹے کا تھیلا 600 روپے میں فروخت کیا جارہا ہے

پھلوں اور سبزیوں کی قیمتوں میں بھی عدم استحکام ہے، پرائس کنٹرول مجسٹریٹ اور پرائس کنٹرول کمیٹیاں مکمل غیر فعال ہو کر رہ گئی ہیں سیاسی طور پر پرائس کنٹرول کمیٹیوں کے نمائندے بھی کارکردگی دکھانے میں ناکام نظر آرہے ہیں ان کا گلہ ہے کہ انتظامیہ ان سے تعاون نہیں کررہی جبکہ پرائس کنٹرول کمیٹیوں کے نمائندے نہ تو گراں فروشوں کو جرمانے کررہے ہیں اور نہ ہی مقدمات درج کئے جارہے ہیں
ڈپٹی کمشنر محمد اصغر جوئیہ رمضان المبارک سے قبل سے دعویٰ کرتے آرہے ہیں کہ شہریوں کو تمام اشیاء ارزاں نرخوں پر دستیاب ہوں گی مگر ایسا ہوتا نظر نہیں آرہا نصب رمضان گزر چکا اور عوام مجبوراً اشیاء خوردونوش مہنگے داموں خرید رہی ہے

سستے رمضان بازاروں میں بھی شہریوں کو مطلوبہ اشیاء خوردونوش دستیاب نہ ہیں اور انکے اوقات بھی محدود ہیں اگر ایک چیز وہاں سے ملتی ہے تو دوسری کیلئے وہاں سے دوسری جگہ جانا پڑتا ہے انتظامیہ وہاں پر بھی تمام اشیاء کی فراہمی کو یقینی نہ بناسکی، شہریوں نے وزیر اعلیٰ پنجاب سے صورتحال کا نوٹس لینے کی اپیل کی ہے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.