fbpx

مہنگی ادویات فروخت کرنے والوں کے خلاف کریک ڈاؤن

لاہور: ڈریپ نے مہنگی ادویات فروخت کرنے والوں کے خلاف کریک ڈاؤن جاری ہے۔

باغی ٹی وی : تفصیلات کے مطابق کریک ڈاؤن کے دوران میڈیکل اسٹورز پر چھاپے مارے گئے ہیں اور دومیڈیکل سٹورزکو سیل کردیا گیا ہے نجی خبر رساں ادارے کے مطابق ہنگی ادویات فروخت کرنے والوں کے خلاف جاری ملک گیر کریک ڈاؤن کے دوران ملتان میں چھاپے مارے گئے تو میڈیکل اسٹورز ادویات مہنگی فروخت کرنے میں ملوث پائے گئے۔

ترجمان ڈریپ کے مطابق کورونا کی ادویات مہنگی فروخت کرنے پر دو میڈیکل اسٹورز کو سیل کیا گیا ہےمیڈیکل اسٹورز پر ہیپارین انجکشن 1400 روپے کا فروخت کیا جا رہا تھا جب کہ ڈریپ کی جانب سے اس کی قیمت 707 روپے مقرر کی گئی ہے۔

ہیپارین انجکشن کورونا سے متاثرہ مریضوں کو آئی سی یو میں لگایا جاتا ہے۔ ترجمان ڈریپ کے مطابق کارروائی کے دوران میڈیکل اسٹورز کو سیل کرکے ادویات ضبط کر لی گئی ہیں تمام کارروائیاں سی ای او ڈریپ ڈاکٹر عاضم رؤف کی ہدایات پر کی جارہی ہیں-

ترجمان ڈریپ کے مطابق ڈریپ کو ادویات مہنگی فروخت کیے جانے کی شکایات موصول ہوئی تھیں ملزمان کے خلاف ڈریپ ایکٹ کے تحت کارروائی کی جائے گی۔

ترجمان ڈریپ کے مطابق ادویات کو مقررہ سے زائد قیمت پر فروخت کرنا قانوناً جرم ہے۔ اس سلسلے میں ترجمان نے شہریوں سے کہا ہے کہ وہ قانون شکن عناصر کے خلاف شکایات درج کرائیں تاکہ ان کے خلاف کاروائی کی جا سکے-