سندھ ہائیکورٹ نے ڈرامہ ”میرے پاس تم ہو “ میں خواتین کی تضحیک کے خلاف مقدمہ نمٹا دیا

سندھ ہائیکورٹ نے گزشتہ برس کا مقبول اور متنازع ترین ڈرامہ ”میرے پاس تم ہو “ میں خواتین کی تضحیک کے خلاف درخواست کی سماعت ہوئی-

باغی ٹی وی : تفصیلات کے مطابق سندھ ہائی کورٹ میں جسٹس محمد علی کی سربراہی میں دو رکنی بینچ کے روبرو ڈرامہ ”میرے پاس تم ہو “ میں خواتین کی تضحیک کیخلاف درخواست کی سماعت ہوئی۔

دوران سماعت نجی ٹی وی کے وکیل نے مؤقف دیا کہ ڈرامہ ختم ہوئے سال ہوگیا درخواست غیر مؤثر ہوچکی ہے۔

دوسری جانب درخواست گزار کے وکیل نے مؤقف اپنایا کہ عدالت پیمرا کیلئے گائیڈ لائن جاری کرے تاکہ آئندہ غیر اخلاقی ڈرامے نہ بنیں۔

پیمرا کے وکیل نے موقف دیتے ہوئے کہا کہ کونسل آف کمپلینٹ موجود ہے وہاں رجوع کیا جاسکتا ہے۔

جس پر درخواست گزار کے وکیل نے موقف دیا کہ کہا گیا وکیل جب چاہے کسی کے چیتھڑے اڑا سکتا ہے 3 سو روپے میں بندا مروایا جاسکتا ہے۔

وکیل کے اس موقف پر عدالت نے ریمارکس دیئے اب تو حالات ٹھیک ہیں اس طرح کی ٹارگٹ کلنگ نہیں ہورہی۔

جسٹس محمد علی مظہر نے درخواست نمٹاتے ہوئے ریمارکس دیئے ہم بھی چاہتے ہیں ڈرامے اخلاقیات کے دائرے میں بنیں اس کیلئے پیمرا موجود ہےدرخواست گزار پیمرا سے مطمئن نہ ہوں تو عدالت سے دوبارہ رجوع کرسکتے ہیں۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.