fbpx

میاں جاوید لطیف کا کس طرح سیاسی قد بڑھ گیا، رہائی پر مریم نواز نے اہم بیان دے دیا

میاں جاوید لطیف کا کس طرح سیاسی قد بڑھ گیا، رہائی پر مریم نواز نے اہم بیان دے دیا

باغی ٹی وی : مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نوازنے ن لیگی رہنما جاوید لطیف کی رہائی پر کہا ہے الحمداللہ جاوید لطیف کی ضمانت ہوگئی،تکلیف اورمشکل توآئی لیکن ان کاسیاسی قدبڑھ گیا،کامیابی حاصل کرنی ہےتوحق گوئی اوربہادری ہی نسخہ ہے،

خیال رہے کہ لاہور کی سیشن کورٹ نے ریاست مخالف بیانات دینے کے کیس میں مسلم لیگ (ن) کے رہنما میاں جاوید لطیف کی ضمانت منظور کر لی ہے، انھیں دو، دو لاکھ کے مچلکے جمع کرانے کی ہدایت کی گئی ہے۔

اس سے قبل لیگی رہنما جاوید لطیف کو بکتر بند گاڑی میں ماڈل ٹاون کچہری پیش کیا گیا۔ عدالت کے احاطے میں میڈیا نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ مجھے اپنی نہیں، ملک کی فکر ہے، ملک کا نظام تباہ ہو گیا ہے۔

عمران خان نے سول نافرمانی کا کہا تو کیا کسی نے اس پر غداری کا ٹائٹل دیا؟ جاوید لطیف

جاوید لطیف بھی بیمار ہو گئے، کرونا کا خدشہ

ن لیگی رہنما کو ضمانت منسوخ ہونے پر گرفتار کر لیا گیا

جاوید لطیف کو پولیس نے کیسے گرفتار کیا؟ ویڈیو سامنے آ گئی

جاوید لطیف کی گرفتاری،شہباز شریف نے افہام و تفہیم کا پیغام دے دیا

جاوید لطیف کی رہائی کی درخواست پر عدالت نے کس کو کیا طلب؟

جاوید لطیف کی رہائی کی درخواست پر لاہور ہائیکورٹ میں فیصلہ محفوظ

ن لیگی رہنما کی عدالت پیشی، بکتر بند گاڑی پر پھولوں کی پتیاں نچھاور

ن لیگی رہنما جاوید لطیف کی عدالت پیشی،عدالت کا بڑا حکم

ریاست مخالف بیان، جاوید لطیف کے جسمانی ریمانڈ کی درخواست پر عدالت کا فیصلہ آ گیا

جاوید لطیف،الطاف حسین اوربی ایل اے کے بیانیہ میں فرق نہیں،وفاقی وزیر

ملک کی خاطر بات کرنا غداری ہے تو ہم سب غدار ہیں، جاوید لطیف

جاوید لطیف کی عدالت پیشی، عید کہاں گزرے گی؟ عدالت کا بڑا حکم

ن لیگی رہنما جاوید لطیف کے ریمانڈ‌ میں توسیع، ضمانت کی درخواست بھی دائر کر دی

واضح رہے کہ نجی ٹی وی کے پروگرام میں ن لیگ کے اہم رہنما میاں جاوید لطیف نے کس طرح نواز شریف کا بیانیہ اورمودی جیسی دھمکیاں دیں میاں جاوید لطیف کہا کہا کہ بے نظیر کی ہلاکت پرتوزراری نے پاکستان کھپے کہہ دیا تھا مگراگرمریم نوازکو کچھ ہوا تو پھر پاکستان نہیں کپھے گا میاں جاوید لطیف نے مزید کہاکہ اگرمریم نوازکو اگرکچھ ہوا تو پھرمشرقی پاکستان والی تاریخ دہرائیں گے، جس پر ان پر ریاست مخالف بیان کے سلسلے میں مقدمہ درجہ ہوا تھا جس میں انہیں‌گرفتار کیا گیا تھا . اس فیصلے کو پہلے عدالت نے محفوظ کیا پھر یہ فیصلہ سنا دیا گیا اور ان کرہائی ملی .

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.