fbpx

مودی سرکار کا مقبوضہ کشمیر کو بھارت کا حصہ بنانے کے لیے ایک اور غیرقانونی اقدام

مودی سرکار کا مقبوضہ کشمیر کو بھارت کا حصہ بنانے کے لیے ایک اور غیرقانونی اقدام سامنے آیا ہے

مقبوضہ وادی کے اضلاعات میں سرکاری عمارتوں پر آئندہ 15 دنوں میں بھارتی ترنگا لہرانے کا حکم دے دیا گیا ہے،بھارتی ترنگا لہرانے کی ہدایات لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا نے جاری کیں،مقبوضہ کشمیر کی 5 اگست کو خصوصی حیثیت منسوخ کرنے سے قبل اپنا آئین اور جھنڈا تھا تا ہم کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کر دی گئی تھی جس پر پاکستان نے بھی احتجاج ریکارڈ کروایا تھا

اس سے قبل مقبوضہ کشمیر کی کسی سرکاری عمارت پر بھارتی ترنگا نہیں لہرایا جا سکا تھا بلکہ کشمیری قوم بھارتی ترنگا لہرانے کی کوشش کو ناکام بنا دیتی تھی اور پاکستانی پرچم لہرا دیتی تھی، پاکستانی پرچم لہرانے کے جرم میں دختران ملت کی سربراہ سیدہ آسیہ اندرابی جیل میں ہیں اور ان پر غداری کا مقدمہ درج کیا گیا ہے،

مقبوضہ کشمیر کی سابق کٹھ پتلی وزیراعلیٰ محبوبہ مفتی کا بھی کہنا ہے کہ جب تک کشمیری پرچم اور آرٹیکل 370 کے واپسی نہیں ہوتی تب تک بھارت سے کوئی واسطہ نہیں۔

مودی مسلمانوں کا قاتل، کشمیر حق خودارادیت کے منتظر ہیں، صدر مملکت

یوم یکجہتی کشمیرپرتحریک آزادی بارے مفتیان نے کیا فتویٰ دیا؟ لیاقت بلوچ نے بتا دیا

کشمیریوں کے قاتل کے ساتھ میں بیٹھوں ،بالکل ممکن نہیں،شاہ محمود قریشی کا بھارتی ہم منصب کی تقریر کا بائیکاٹ

کشمیر پر دو ایٹمی طاقتیں آمنے سامنے آ سکتی ہیں،وزیراعظم عمران خان کا اقوام متحدہ میں خطاب

وزیراعظم نے مظلوموں کا مقدمہ دنیا کے سب سے بڑے فورم پررکھ دیا،فردوس عاشق اعوان

کشمیر پر بھارتی سپریم کورٹ کا فیصلہ بڑی کامیابی ہے، وزیر خارجہ

مقبوضہ کشمیر،کشمیری سڑکوں‌ پر،عمران خان زندہ باد کے نعرے، کہا اللہ کے بعدعمران خان پر بھروسہ

برہان وانی کی چوتھی برسی، مقبوضہ کشمیر میں حریت کی اپیل پر مکمل ہڑتال

مقبوضہ وادی میں نام نہاد سرچ آپریشن کی آڑ میں مظلوم اور نہتے کشمیریوں کے قتل کا سلسلہ بھی جاری ہے۔ وادی میں خوف کے سائے برقرار ہیں جبکہ سری نگر کی جامع مسجد سمیت دیگر مساجد میں نماز جمعہ ادا نہیں کرنے دی جاتی۔ قابض بھارتی فوج نے کشمیریوں کی زندگی اجیرن بنا دی ہے

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.