بی جے پی نازیزم سے متاثر ہوکر ہندوستان کوفاشسٹ ریاست میں تبدیل کر چکا ہے۔ معید یوسف

وزیراعظم کے معاون خصوصی ڈاکٹر معید یوسف کا جسٹ فیوچر بین الاقوامی کانفرنس سے خطاب۔ انہوں نے کہا کہ قوم پرستی ، زینو فوبیا اور اسلامو فوبیا عروج پر ہیں۔ ہندوستان کے سب سے بڑے صوبے اتر پردیش (یوپی) کے وزیر اعلی نے مسلمانوں کو "وائرس” قرار دیا۔ مغربی میڈیا نے مسلمانوں کی غلط تصویر کشی کر کے اسلامو فوبیا بڑھاوا دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم ایک نئے ہندوستان کا سامنا کر رہے ہیں۔ بی جے پی نازیزم سے متاثر ہوکر ہندوستان کو فاشسٹ ریاست میں تبدیل کر چکا ہے۔اس کا براہ راست اثر ہندوستان کے مسلمانوں ، کشمیر اور پاکستان پر پڑتا ہے۔ معید یوسف نے کہا کہ ہندوستانی سینئر رہنماؤں، جیسے امیت شاہ، نے مسلمانوں کو دیمک قرار دیا جب کہ ہندوستان میں کورونا وائرس کے پھیلاؤ کے لئے مسلمانوں کو مورد الزام قرار دیا۔ انڈین رجسٹر فار سٹیزنشپ (این آر سی) اور سٹیزن ترمیمی ایکٹ (سی اے اے) مسلمانوں کو شہریت سے محروم کرے گا۔اس کی وجہ سے مسلمان حراستی کیمپوں میں رہنے پر مجبور ہوگا۔معید یوسف نے کہا کہ کشمیر میں كرونا کا مقابلہ کرنے کے بجائے ظلم و بربریت زور و شور سے جاری ہے، مودی کی کشمیر میں ظلم اور بربریت کافوری نوٹس لینا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ5 اگست کے بعد کرفیو اور بلیک آؤٹ کے ذریعے مقبوضہ خطے میں کشمیریوں کا گلا گھونٹا گیا۔ہندوستان میں مودی کی نگرانی میں مسلمانوں پر ظلم تیزی سے بڑھ رہا ہے۔ انہوں نےدانشوروں اور اسکالرز سے اپیل کی کہ وہ مودی کے فاشزم اور اسلامو فوبیا کا مسئلہ اٹھائیں۔کیونکہ اگراسلامو فوبیا کا کچھ نہ کیا تو دنیا عدم استحکام اور انتشار کی طرف گامزن ہوگی۔ خصوصاوزیر اعظم عمران خان نے اقوام متحدہ میں گذشتہ سال اسلامو فوبیا سے نمٹنے کے لئے اپنا وژن پیش کیا۔اس ویژن کا مقصد اسلام کی درست تصویر دنیا کے سامنے پیش کرنا ہے۔ڈاکٹر معید یوسف نے شرکا پر زور دیا کہ وہ اسلامو فوبیا کے خلاف ڈٹ جائیں۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.