محلہ معراجپورہ صفائی کا منتظر

شیخوپورہ (نمائندہ باغی ٹی وی محمد فہیم شاکر سے) محلہ معراجپورہ 10 ہزار نفوس کی آبادی پر مشتمل علاقہ ہے جہاں ایک طرف تنگ گلیاں ہیں تو دوسری طرف سیوریج کا ناکارہ نظام، جس بدبو پھیلانے کے ساتھ ساتھ محلے کو بدصورت بنانے میں اہم کردار ادا کرتا ہے
انتظامیہ کو کبھی خیال نہیں ہوا کہ اس کی صفائی کی طرف توجہ دی جائے
تنگ گلیوں کو چھوڑ کر ایک ہی مرکزی راستہ اس محلے کو جاتا ہے جو سپورٹس کمپلیکس کی دیوار کے ساتھ ساتھ گزرتا ہے
سپورٹس کملیپکس کی دیوار بھی دیوارِ میکسیکو معلوم ہوتی ہے کہ جس کے شمالی جانب تو سجی سجائی بنی سنوری کروڑوں کی لاگت سے کھڑی عالی شان عمارت ہے تو جنوبی جانب گندگی اور کچرے کے بے تحاشہ ڈھیر، یہ تفریق محلہ معراجپورہ کے رہائشیوں کو اس قدر چھبتی ہے کہ وہ اس پر بات کرتے وقت چِلّا اُٹھتے ہیں اور سپورٹس کمپلیکس کو زحمت اور باعثِ کوفت قرار دیتے ہیں

ان کا خیال ہے کہ پہلے علاقہ مکینوں کو ان کے جائز حقوق ملنے چاہیئے تھے پھر سپورٹس کمپلیکس پر پیسہ لگنا چاہیے تھا
پانچ سال ہوچلے اس کمپلیکس کو بنے لیکن معراجپورہ کو جاتے مرکزی راستے کہ تعمیر تو درکنار یہاں کی صفائی ہی نہیں کروائی گئی، شاید یہ علاقہ شہری انتظامیہ کے زیر انتظام نہیں اس لیے یہاں میونسپل کارپوریشن والے آنا گوارا نہیں کرتے
مقامی بزرگ نے باغی ٹی وی سے بات کرتے ہوئے بتایا کہ بارش ہوجائے تو یہاں بدبو کے بھبھوکے جینا حرام کر دیتے ہیں کیونکہ اس گہری جگہ سے پانی کے نکاس کی کوئی سبیل تو ہے نہیں، پھر اگر کوئی فوت ہوجائے تو یہی مرکزی راستہ ہے جہاں سے گزرنا ہوتا ہے لیکن گندگی کے ڈھیروں سے اٹا پڑا یہ راستہ جنازے کا راستہ بھی روک لیتا ہے
ایک دوسرے نوجوان نے بتایا کہ یہی وہ خالی جگہ تھی جہاں ہمارے بچے کھیل لیا کرتے تھے لیکن یہاں پر سپورٹس کمپلیکس بنا کر ہمارے بچوں سے کھیل کی جگہ چھین لی گئی ہے اب اس میں مقامی افراد اور بچوں کا داخلہ بھی منع ہے نہ ہم اس کے اندر صبح کی سیر کرنے جا سکتے ہیں نہ ہمارے بچے کھیلنے جا سکتے ہیں
بے ہنگم اُگی گھاس سے یہ میدان اٹا پڑا ہے نہ اس کی صفائی کروائی جاتی ہے نہ بچوں کو کھیلنے دیا جاتا ہے
رضوان نے بتایا کہ انتظامیہ اگر اس راستے کو پختہ نہیں کروا سکتی تو کم از کم گندگی کے ڈھیر اٹھوا کر یہاں مٹی ڈال کر راستہ اونچا اور برابر ہی کر دیا جائے تاکہ گزرنا آسان ہو
سمیر اور دیگر اہل محلہ نے انتظامیہ سے اپیل کی ہے کہ اس راستے کی فی الفور صفائی کروائی جائے تاکہ بارشوں سے پہلے پہلے یہ راستہ نہ صرف گزرنے کے قابل ہو جائے بلکہ پانی کے پانی کے یہاں جمع رہنے کے احتمال سے بچا جا سکے

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.