fbpx

شیخوپورہ : ڈاکٹر رائے سمیع کے معطل ہونے کے بعد محکمہ صحت میں مزید بے ضابطگیوں کا انکشاف

باغی ٹی وی:شیخوپورہ(محمد طلال سے)شیخوپورہ چیف ایگزیکٹیو آفیسر ڈسٹرکٹ ہیلتھ اتھارٹی ڈاکٹر رائے سمیع کے معطل ہونے کے بعد محکمہ صحت ضلع شیخوپورہ میں مزید متعدد بے ضابطگیوں کا انکشاف ہوا ہے ذرائع نے بتایا ہے کہ سرکاری شفاء خانوں کے لیے خریدی جانے والی ادویات کے سٹاک میں شدید کمی پائی گئی ہے اور محکمہ صحت میں حالیہ بھرتیوں کے دوران بھی بعض حکام نے رشوت کا بازار گرم کیا ہوا تھا اور چند ماہ کے دوران محکمہ صحت کے ملازمین کے کام بھی بھاری رشوت لے کر کیئے جاتے تھے جس کی وجہ سے اس محکمہ کے چھوٹے ملازمین میں سخت بے چینی پائی جاتی تھی جبکہ انسداد ڈینگی کی سرگرمیوں کے بارے میں بھی جعلی رپورٹیں تیار کی جاتی رہی ہیں ذرائع کے مطابق محکمہ صحت ضلع شیخوپورہ میں کرپشن اور ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال کا ایم ایس بننے کے لیے 2 ڈاکٹروں کی لڑائی کے بارے میں صوبائی وزیر قانون چوہدری خرم شہزاد ورک ایڈووکیٹ نے وزیر اعلیٰ پنجاب چوہدری پرویز الہٰی کو آگاہ کرتے ہوئے مطالبہ کیا تھا کہ ڈاکٹررائے محمد سمیع کے خلاف پیڈا ایکٹ 2006ء کے تحت محکمانہ تحقیقات کروائی جائے اور اس کے خلاف اینٹی کرپشن ایکٹ کے تحت مقدمہ بھی درج کیا جائے صوبائی وزیر نے وزیراعلیٰ کو بتایا کہ سی ای او ہیلتھ نے سرکاری فنڈز سے اپنے دفتر کی تزئین و آرائش پر لاکھوں روپے خرچ کیئے اور محکمہ صحت کے ویئر ہاؤسز میں ادویات دستیاب نہ ہیں اور اس سی ای او کے دور شپ میں ویکسی نیشن کی بھی جعلی رپورٹس بعض علاقوں میں تیار کی جاتی رہی ہیں۔