fbpx

لانگ مارچ؛ معاشی مشکلات کا شکار وفاق سکیورٹی پر کروڑوں روپے خرچ کرنے کیلئے تیار

معاشی مشکلات کا شکار وفاقی حکومت اسلام آباد کی سکیورٹی پر کروڑوں روپے خرچ کرنے کیلئے تیار

معاشی مشکلات کا شکار وفاقی حکومت اسلام آباد کی سکیورٹی پر کروڑوں روپے خرچ کرنے کیلئے تیار ہوگئی ہے۔ باغی ٹی وی کے مطابق تحریکِ انصاف کے 30 روز میں 1 جبکہ حکومت کے ڈیڑھ ارب خرچ ہوں گے جبکہ پی ٹی آئی حقیقی آزادی مارچ کیلئے 50 ہزار کارکنان کو اسلام آباد لانے کا پلان بنا چکی ہے۔ قبل ازیں وفاقی حکومت نے اسلام آباد کے ریڈ زون کو توسیع دیتے ہوئے لانگ مارچ کی نقل و حمل محدود کرنے کیلئے اقدامات اٹھائے۔ حکومت کو 1600 کنٹینرزکے حصول کیلئے 10 کروڑ روپے خرچ کرنے ہوں گے۔

سرکاری اعدادوشمار کے مطابق حکومت کو سکیورٹی آلات کی مد میں 30 کروڑ روپے خرچ کرنا ہوں گے جبکہ پولیس گاڑیوں اور ٹرانسپورٹ پر 25 کروڑ روپے خرچ آئے گا۔ خیال رہے کہ پاکستان تحریکِ انصاف کے لانگ مارچ کا آج چھٹا روز ہے، چیئرمین عمران خان کی قیادت میں راولپنڈی بائی پاس گوجرانوالہ سے قافلہ آج گکھڑ منڈی روانہ ہوگا۔
مزید یہ بھی پڑھیں؛ شادی کے 4 ماہ بعد بیوی شوہر کے لاکھوں روپے اور زیورات چُرا کر فرار
تجدیدی فیس، ٹیلی کام کمپنیوں سے 9.5 ارب روپے وصول. پی ٹی اے
وزیرِ اعظم شہباز شریف کی چینی صدر شی جن پنگ سے ملاقات، سٹریٹجک پارٹنرشپ مزید مضبوط کرنے پر اتفاق
کراچی میں پولیس مقابلے میں ایس ایچ او زخمی، ڈاکو کی ہوئی موت
سابق وزیر اعظم عمران خان اپنا پہلا خطاب مارچ کے شرکاء سے راہوالی کے مقام پر جبکہ دوسرا گکھڑ منڈی پر کریں گے۔ خطاب کے بعد لانگ مارچ کا قافلہ گکھڑ کے مقام پر ہی پڑاؤ ڈالے گا۔ چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان گکھڑ کے مقام پر خطاب کے بعد لاہور واپس آجائیں گے اور اپنی رہائش گاہ زمان پارک میں ہی قیام کریں گے۔ پی ٹی آئی کے مختلف مقامات سے آنے والے قافلے مرکزی دھارے میں شامل ہورہے ہیں۔