رویت ہلال کمیٹی کا چیئرمین تبدیل کرنے کی تجویز، مفتی منیب الرحمن نے ایسا کیا کہا کہ شوکت یوسف زئی کو چپ لگ گئی

مرکزی رویت ہلال کمیٹی کے چیئرمین مفتی منیب الرحمن نے مفتی شہاب الدین پوپلزئی کو مرکزی رویت ہلال کمیٹی کا چیئرمین بنانے کی تجویز پر کہا ہے کہ حکومت ہی ان کے ہاتھوں میں دے دینی چاہیے.

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق صوبائی وزیر اطلاعات خیبر پختونخواہ شوکت یوسفزئی کی جانب سے بیان دیا گیا تھا کہ مفتی منیب الرحمن کو آرام دینا چاہیے اور مفتی شہاب الدین پوپلزئی کو چیئرمین مرکزی رویت ہلال کمیٹی بنا دینا چاہیے جس پر مفتی منیب الرحمن بھی میدان میں آگئے اور کہا ہے کہ آپ حکومت ہی مفتی پوپلزئی کے کنٹرول میں دے دیں تاکہ تمام کام چوبیس گھنٹے پہلے ہو جایا کریں. انہوں نے کہاکہ بلکہ آپ کو چاہیے کہ پشاور بی آر ٹی بھی ان کے حوالے کر دیں‌ شاید جلدی مکمل ہو جائے.

ادھر وفاقی وزیر سائنس وٹیکنالوجی فواد چودھری نے رویت کے مسئلے کے حل کیلئے قمری کیلنڈر اور ایپلی کیشن کو وزارت کی ویب سائٹ پر اپ لوڈ کر دیا اور کہا ہے کہ مفتی منیب الرحمان اور مفتی شہاب الدین پوپلزئی ہمارے بزرگ ہیں، میں ان کا احترام کرتا ہوں۔
یاد رہے کہ مرکزی رویت ہلال کمیٹی کا اجلاس آج ہو گا جس میں‌عید کا چاند نظر آنے کا اعلان کیا جائے گا.

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.