fbpx

محمد پور دیوان فلتھ ڈپو بن گیا

محمد پور دیوان باغی ٹی وی(نامہ نگار،جنید احمدانی) تاریخی تجارتی تعلیمی ثقافتی قصبہ محمد پور دیوان جس کی ابادی تقریباً اسی ہزار کے قریب ہے اکسیویی صدی کے اس دور جدید میں پتھر کے زمانے میں زندگی بسر کرنے پر مجبور ضلع راجن پور کادل گندگی کوڑا کرکٹ عفونت کے فلتھ ڈپو میں تبدیل ہو چکا ہے حشرات الارض کی تعداد میں اضافے سے شہری خوفزدہ وبائ امراض میلریا دماغی ملیریا کھانسی بخار الرجی خارش دمہ ٹی بی کے امراض خطرناک شکل اختیار کر گئے زیر زمین پانی کڑوا مضر صحت ہونے سے شہری بزرگ جوان خواتین بچے گردے فیل ہونے کالے یرقان کے باعث لقمہء اجل بن گئے لیاقت علی خانزادہ راجپوت گردے فیل ہونے کے باعث جان جان آفریں کے سپرد کر دی شہری پانی کی بوند بوند کو ترس کر رہ گئے گندگی کوڑا کرکٹ عفونت کے باعث شہریوں کا جینا سانس لینا محال بن گیا وبائ امراض پھوٹ پڑے ملیریا دماغی ملیریا کھانسی بخار دمہ خارش الرجی وبائ امراض پھیل گئے حشرات الارض سانپوں کی تعداد میں خطرناک اضافے سے شہری سہم گئے مساجد مارکیٹوں بازاروں عبادت گاہوں کے اطراف گندگی کے انبار عفونت سے شہریوں کا جینا سانس لینا بھی محال بن چکا ہے زیر زمین پانی کڑوا مضر صحت ہونے سے جوان بچے بوڑھے خواتین موت کی وادی۔ میی جاچکے ہیں زمیندار لیاقت علی خانزادہ گردے فیل ہونے کے باعث جان جان آفریں کے سپرد کر دی مکینوں شہریوں سماجی تعلیمی مزہبی حلقوں میں تشویش کی شدید لہر ارباب اختیار کی مجرمانہ خاموشی منتخب اراکین اسمبلی خاموش تماشائی سماجی تعلیمی ثقافتی حلقوں محمد فہیم محمد نعیم محمد نعمان شہزاد احمد محمد رحیم محمد وسیم ذوالفقار علی محمد اسد محمد حسن محمد حسین زین العابدین محمد عثمان سمیت دیگر نے سخت تشویش کا اظہار کرتے ہوئے صحت وصفائی کی مخدوش صورتحال کا منتخب اراکین اسمبلی کمشنر ڈی جی خان ڈویژن ڈپٹی کمشنر راجن پور سے صورت حال کا نوٹس لیتے صحت وصفائی کا مستقل نظام قائم کرنے گندگی کوڑا کرکٹ کے ڈھیر ہنگامی بنیادوں پر اٹھانے اور شہریوں کو پینے۔ کیلئے صاف شفاف واٹر فلٹیرشن پلانٹ کی تنصیب کرنے واٹر سپلائی اسکیم چالو کرنے کا مطالبہ کیا ہے تاکہ شہری صاف ستھرے ماحول میں سانس لے سکیں میٹھے پانی سے قیمتی جانیں محفوظ رہ سکیں فوری واٹر سپلائی اسکیم چالو کرنے اور واٹر فلٹیرشن پلانٹ کی تنصیب کا مطالبہ بھی کیا ہے تاکہ گردے فیل ہونے اور کالے یرقان وپیٹ کے پچیدہ امراض سے شہری محفوظ رہ سکیں ۔