ملکی زرمبادلہ کے ذخائر بلند ترین سطح پر ، بڑا ریکارڈ ٹوٹ گیا

ملکی زرمبادلہ کے ذخائر 34 ماہ کی بلند ترین سطح پر پہنچ گئے۔

باغی ٹی وی اسٹیٹ بینک کے مطابق ملکی زرمبادلہ کے ذخائر میں 17.87 کروڑ ڈالر کا اضافہ ہوا ہے۔

اسٹیٹ بینک پاکستان کی جانب سے جاری کردہ تفصیلات کے مطابق ملکی زر مبادلہ ذخائر بڑھ کر 20.08 ارب ڈالر ہو گئے ہیں جبکہ اسٹیٹ بینک کے ذخائر 19 کروڑ ڈالر اضافے سے 12.93 ارب ڈالر ہو گئے ہیں۔

کمرشل بینکوں کے ذخائر ایک کروڑ ڈالر کم ہو کر 7.15 ارب ڈالر ہو گئے۔ اکتوبر میں جاری کھاتے کا توازن مزید بہتر ہو گیا اور اکتوبر میں جاری کھاتا 38 کروڑ 20 لاکھ ڈالر سر پلس رہا۔

تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ زرمبادلہ ذخائر کو مستحکم رکھنے کے لیے حکومت کو ایکسپورٹس اور غیر ملکی سرمایاکاری کے فروغ پر توجہ دینے کی ضرورت ہے۔

سٹیٹ بینک کی جانب سے اس حوالہ سے جاری کردہ اعدادوشمارکے مطابق 13 نومبر 2020ء کو ختم ہونے والے ہفتہ کے دوران ملک کے زرمبادلہ کے ذخائر کا حجم 20.085 ارب ڈالر ریکارڈ کیا گیا۔

گزشتہ ہفتہ کے اختتام پر زرمبادلہ کے ذخائر کا حجم 19.906 ارب ڈالر ریکارڈ کیا گیا تھا۔ سٹیٹ بینک کے مطابق 13 نومبر 2020ء کو ختم ہونے والے ہفتہ کے دوران سٹیٹ بینک کے پاس زرمبادلہ کے ذخائر کا حجم 12.931 ارب ڈالر تھا جو دو فروری 2018ء کے بعد زرمبادلہ کی بلند ترین شرح ہے۔ بینکوں کے پاس زرمبادلہ کے ذخائر کا حجم 7.154 ارب ڈالر تھا

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.