fbpx

تمل ناڈو :مقابلہ حسن میں شرکت ،5 پولیس اہلکاروں کا تبادلہ

تبادلے کا حکم اس وقت آیا جب اہلکاروں نے مقابلہ حسن میں ریمپ پر واک کی

تمل ناڈو کے مائیلادوتھرائی میں مقابلہ حسن میں شرکے کرنے والی 5 لیڈی پولیس کا تبادلہ کر دیا گیا-

باغی ٹی وی : بھارتی خبررساں ایجنسی "این ڈی ٹی وی” کے مطابق اسپیشل اسسٹنٹ پولیس انسپکٹر سمیت پانچ پولیس اہلکاروں کا مقابلہ حسن میں شرکت کے بعد مائیلادوتھرائی سے تبادلہ کر دیا گیا۔

نام تبدیل کر کے فلموں میں کام کرنیوالا انڈیا کا 30 سال سے مفرور ’اشتہاری مجرم‘…

حکام کے مطابق جمعہ کو ناگاپٹنم سپرنٹنڈنٹ آف پولیس (ایس پی) کے ذریعہ تبادلے کا حکم اس وقت آیا جب اہلکاروں نے مقابلہ حسن میں ریمپ پر واک کی۔

بھارتی میڈیا کے مطابق گزشتہ اتوار کو ایک پرائیویٹ تنظیم کی جانب سے مائیلادوتھرائی ضلع کے سمبانارکوئل میں مقابلہ حسن کا انعقاد کیا گیا جس میں اداکارہ یاشیکا آنند نے بطور مہمان خصوصی شرکت کی اور مقابلے کا افتتاح کیا جس میں پولیس لیڈی اہلکاروں نے بھی ریمپ پر واک کی-

ناگاپٹنم ضلع کے سپرنٹنڈنٹ آف پولیس جاواگر نے ان پولیس اہلکاروں (رینوکا، اشونی، نیتیا سیلا اور شیوانیسن) کے تبادلے کا حکم جاری کیا ہے جس میں اسپیشل اسسٹنٹ انسپکٹر سبرامنیم بھی شامل ہیں، جو اس وقت سمبانارکوئل پولیس اسٹیشن میں کام کررہی ہیں معاملے سے متعلق مزید معلومات ابھی تک سامنے نہیں آئی ہیں-

زہریلی شراب پینے سے 8 افراد ہلاک، 11 نابینا اور 30 سے زائد کی حالت غیر

قبل ازیں بھارتی میڈیا نے انکشاف کیا تھا کہ انڈیا کی سپیشل ٹاسک فورس نے ایک ایسے شخص کو گرفتار کیا ہے جو اشتہاری اور مفرور تھا اوم پرکاش المعروف پاسا ماضی میں انڈین آرمی سےوابستہ رہےاوران کو 1988 میں برطرف کر دیا گیا تھا30 سال سے مفرور ’اشتہاری مجرم‘ نام تبدیل کر کے فلموں میں کام کرتا رہا –

ملزم 2007 سے اترپردیش کی مقامی فلموں میں کام کر رہے ہیں اور اب تک 28 فلموں میں کام کر چکے ہیں جن میں ٹکراؤ، دبنگ چوپڑا یو پی اور جھٹکا شامل ہیں نارینا کےرہائشی اوم پرکاش قتل اور چوری سمیت بے شمار جرائم کے مقدمات میں مطلوب تھےاوم پرکاش کو غازی آباد سے گرفتار کیا گیا جہاں وہ پولیس سے بچنے کے لیے اپنی شناخت کو تبدیل کر کے رہائش پذیر تھے۔

پولیس حکام کا کہنا ہے کہ ابتدائی تحقیقات سے یہ بات سامنے آئی ہے کہ اوم پرکاش نے 1984 میں جرم کی دنیا میں قدم رکھا اس وقت وہ فوج میں تھے، جس کے بعد سے وہ لاپتہ ہو گئے اور 1988 میں ان کو برطرف کر دیا گیا تھا-

حکومت مخالف احتجاج، کانگریس لیڈر راہول اور پریانکا گاندھی گرفتار