fbpx

سیلاب،صورتحال واضح ہونے تک مسافر ٹرینیں نہیں چلا سکتے،خواجہ سعد رفیق

وفاقی وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق خصوصی ٹرین پررحیم یار خان ریلوے اسٹیشن پہنچ گئے

اس موقع پر وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق کا کہنا تھا کہ ریلوے ٹریک کی سیفٹی کیلئے عملہ دن رات کام کرتا ہے کمزور ٹریک پر انجینئرنگ ریسٹریکشن لگتی ہے اور ٹرین کی اسپیڈ کم ہوجاتی ہے،ایم ایل ون پراجیکٹ 4 سال سے تاخیر کا شکار ہے، ایم ایل ون کا تخمینہ اب 10 ارب ڈالر ہے جوہمارے پاس نہیں پاکستان کے پاس 500 ملین ڈالر بھی نہیں ،سابق وزیر شیخ رشید نے فریم ورک ایگریمنٹ توڑ دیا تھا فریم ورک ایگریمنٹ کیلئے وزیراعظم کے ہمراہ چین جارہا ہوں،کوشش ہے رواں سال ایم ایل ون پر آن گراؤنڈ کام شروع ہو جائے،ہم سب کی اخلاقی ذ نہ دار ی ہے کہ سیلاب متاثرین کی مدد کریں،

وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق کا مزید کہنا تھا کہ سندھ اور بلوچستان میں سیلاب سے ریلوے انفراسٹرکچر شدید متاثر ہوا،مال بردار گاڑیاں پانی میں سے گزر کر چل رہی ہیں، جب تک پانی نہیں اترے گا ٹریک کی اصل صورتحال سامنے نہیں آئے گی، صورتحال واضح ہونے تک مسافر ٹرینیں نہیں چلا سکتے 5 روز کے لیے سندھ اور بلوچستان جا رہا ہوں ،سندھ اور بلوچستان کے سیلاب سے متاثرہ علاقوں میں نقصانا ت کا جائزہ لیں گے،پہلا دورہ سکھر کا کروں گا ،وہاں نقصانات اور متاثرہ ٹریکس کا جائزہ لوں گا،سندھ اور بلوچستان میں سیلاب سے ریلوے انفراسٹرکچر  شدید متاثر ہوا،ایم ایل ون، ٹو اور تھری شدید متاثر ہوئے،موجودہ صورتحال میں محکمہ ریلوے مالی بحران کا شکار ہوگیا ہے محکمہ ریلوے کا موجودہ خسارہ 13 ارب روپے ہے چینی کمپنی کو کہا ہے پہلے روہڑی تا کراچی ریلوے سیکشن مرمت کریں،ہم عالمی مالیاتی اداروں کی سرمایہ کاری کیلئے کوشش کررہے ہیں سڑک اور ریلوے ٹریک بنانے میں زمین آسمان کا فرق ہے،ریلوے کو پاوں پر کھڑا کرنے کیلئے 15 سے 20 سال درکار ہیں،ہم نے 2013 اور 2018 تک ٹرن آراونڈ کیا وہ برباد ہوگیا،

خواجہ سعد رفیق کا مزید کہنا تھا کہ ریلوے کو پاوں پر کھڑا کرنے کے لیے اب پھر صفر سے شروع کریں گے، یہاں حکومت آتی ہے تو لوگ اسے گرانے میں لگ جاتے ہیں،عمران خان اور انکے سہولت کاروں نے ملکی معیشت کو تباہ کردیا، 22کروڑ عوام کے ملک کو چلانا کوئی آسان کام نہیں ہے، جب ملک دیوالیہ پن پر آجائے دنیادینے کوتیار نہ ہو تو آئی ایم ایف کے پاس جانا پڑتا ہے آئی ایم ایف سے ایگریمنٹ ہوا ہے تو سیلاب آگیا پاکستان کی تاریخ کا خطرناک سیلاب ہے جسکے اثرات 10 سال تک محسوس کیے جائیں گے بڑی مشکلوں سے فیز ون آپریشن شروع کیا ہے،لوگوں کی جانوں کے ساتھ کھیل نہیں سکتے ریلوے ملازمین نے جذبہ جہاد کے ساتھ کام کیا جو قابل تحسین ہے، چند روز میں تفتان تک ٹریک کلیئر کردیں گے کوشش ہے کسی طرح سے پانی ریلوے ٹریک سے ہٹ جائے، بہت مشکل صورتحال ہے،مالی نقصان بھی زیادہ ہورہاہے،ریلوے کو روزانہ 15،16کروڑ روپے کا نقصان پہنچ رہا ہے،جب آفت آتی ہے تو شکست تسلیم نہیں کرتے ڈٹ کہ مقابلہ کرتے ہیں،

سول ایوی ایشن نے گونگلوؤں سے مٹی جھاڑ دی،پائلٹ کوذمہ دار ٹھہرانے کا لیٹر کیوں جاری کیا گیا؟ سنئے مبشر لقمان کی زبانی

طیارہ حادثہ،ابتدائی رپورٹ اسمبلی میں پیش، تحقیقاتی کمیٹی میں توسیع کا فیصلہ،پائلٹس کی ڈگریاں بھی ہوں گی چیک

طیارہ حادثہ، تحقیقات کے لئے جے آئی ٹی تشکیل

لاشوں کی شناخت ،طیارہ حادثہ میں مرنیوالے کے لواحقین پھٹ پڑے،بڑا مطالبہ کر دیا

کراچی طیارہ حادثہ،طیارہ ساز کمپنی ایئر بس نے ابتدائی تحقیقاتی رپورٹ جاری کر دی