fbpx

برطانیہ:اسلاموفوبیا کا ایک اورواقعہ،شرپسندوں نے مسلم خاتون کونسلر کی گاڑی کو آگ لگادی

برطانیہ میں اسلاموفوبیا کے بڑھتے ہوئے واقعات مانچسٹر شرپسندوں نے مسلم خاتون کونسلر کی گاڑی کو آگ لگادی ۔

باغی ٹی وی: غیر ملکی میڈیا کے مطابق مانچسٹر کی اولڈ ہم کونسل کی پہلی بار لیڈر منتخب ہونے والی مسلم خاتون عروج شاہ کی گاڑی کو ان کے گھر باہر نذر آتش کیا گیا، اس وقت کونسل لیڈر اپنے گھر میں ہی موجود تھیں۔

رپورٹ کے مطابق شرپسندوں نے گاڑی پر آتش گیر مادہ گرا کر اسے آگ لگائی، آگ اس قدر شدید کی تھی کہ اس کے شعلے عروج شاہ کے پڑوس میں واقع گھر تک جاپہنچے-

اولڈہم کونسل کی رہنما عروج شاہ کی گاڑی منگل کے روز 01:30 بی ایس ٹی سے پہلے ہی کھڑی کردی گئی تھی ، جس سے کار اور پڑوسی کیاملاک کو نقصان پہنچا تھا۔

تاہم برطانوی پولیس نے 23 سالہ مشتبہ شخص کو گرفتار کرکے تحقیقات شروع کردی ہیں۔

ویسلی نائٹس پولیس کے ڈپٹی چیف انسپکٹر نے اس حملے کو اندھا دھند ، قابل نفرت کارروائی قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ خوش قسمت سے اس میں کسی کو نقصان نہیں پہنچا۔

انہوں نے مزید کہا کہ ہم اس وقت تک چین سے نہیں بیٹھیں گے جب تک کہ اس واقعے کے محرکات کو پوری طرح نہیں سمجھا جاسکے اور ذمہ داران کو انصاف کے کٹہرے میں لایا جائے۔

اس خطے کے آس پاس کے سیاست دانوں نے اس حملے کی مذمت کی ہےاولڈہم ویسٹ اور رائٹن کے لیبر کے رکن پارلیمنٹ ، جم مکمیہون نے "جوابدہ افراد قانون کے مطابق سزا دینے کا مطالبہ کیا انہوں نے ٹویٹ کیا عروج شاہ کے ساتھ یکجہتی کا اظہار کرتا ہوں جس کو ایسے بزدلانہ طریقے سے نشانہ بنایا گیا ہے۔”