ورلڈ ہیڈر ایڈ

جنوبی پنجاب سے مسلم لیگ ن کے بیشتر اراکین اسمبلی کا تحریک انصاف میں شمولیت کا فیصلہ، باغی ٹی وی کی خصوصی رپورٹ

جنوبی پنجاب سے تعلق رکھنے والے مسلم لیگ ن کے بیشتر اراکین قومی و صوبائی اسمبلی جلد تحریک انصاف میں شمولیت اختیار کر لیں گے.

باغی ٹی وی کو ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ اس سلسلہ میں کئی اراکین اسمبلی کی وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار سے ملاقاتیں ہوئی ہیں اور انہوں نے اس بات کی یقین دہانی کروائی ہے کہ مناسب موقع پر اس کا باقاعدہ اعلان کیا جائے گا. ذرائع کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے چند دن قبل وزیر اعلیٰ‌ پنجاب سردار عثمان بزدار سے خاص طور پر ملاقات کی تھی اس کے بعد سے وزیر اعلیٰ پنجاب متحرک ہیں‌ اور ن لیگی اراکین سے ملاقاتیں کی جارہی ہیں.

وزیر اعظم عمران خان سے ملاقات کرنے والے ن لیگی اراکین اسمبلی کے نام سامنے آ گئے

ایک دن قبل بنی گالہ میں‌ مسلم لیگ ن کے جن اراکین اسمبلی نے ملاقات کی تھی انہیں بھی سردار عثمان بزدار لیکر گئے اور ڈیڑھ گھنٹہ جاری رہنے والی ملاقات میں وہ خود بھی موجود رہے. وزیرا عظم عمران خان سے ملاقات کرنے والے اراکین اسمبلی کے نام بھی منظر عام پر آ گئے ہیں‌ جس پر مسلم لیگ ن کی قیادت میں سخت بے چینی اور تشویش پائی جاتی ہے. ذرائع کے مطابق مسلم لیگ ن کے اراکین اسمبلی پارٹی کے اندر مریم نواز اور شہباز شریف کے مابین ہونے والے اختلافات پر بھی مایوسی کا شکار ہیں اور وہ تحریک انصآف میں‌ شامل ہونے کو اپنے لئے بہتر تصور کر رہے ہیں.

نون لیگ میں ایم پی اے اور ایم این اے کے بعد سینیٹرز کا فاروڈ بلاک بھی سامنے آگیا، باغی کی خاص رپورٹ

وزیر اعظم عمران خان نے بنی گالہ میں 15 اراکین اسمبلی سے ملاقا ت کی تھی. اسی طرح‌ یہ خبریں‌ بھی منظر عام پر آچکی ہیں کہ سینیٹرز میں‌ بھی فارورڈ‌ بلاک بننے جارہا ہے اور کہا گیا ہے کہ سات ممبران سینٹ نے مریم نواز کے خلاف عدم اظہار کیا ہے. سینئرز ممبران سینٹ کے مطابق مریم نواز نے میاں شہباز شریف کو بائی پاس کر کے پارٹی کی روح کی خلاف ورزی کی ہے اور پارٹی کو دو حصوں میں تقسیم کرنے کی کوشش کی ہے. کہا جارہا ہے کہ 20 سے زائد ایم پی ایے اور ایم این ایے اور سات سینٹرز نے عدم اعتماد کا اظہار کیا ہے.

حکومت نے ممبران کو خریدنے کیلئے کیا حکمت عملی طے کی ہے؟ رانا ثناء‌اللہ نے بڑا دعویٰ‌ کر دیا

ذرائع کے مطابق مسلم لیگی اراکین اسمبلی میاں‌ نواز شریف کی حکومت سے مبینہ ڈیل کی خبروں‌ پر بھی پریشان ہیں اور ان کے ذہنوں‌ میں‌ یہ خدشات پائے جارہے ہیں‌ کہ اگر ہماری قیادت ڈیل کر کے ملک سے باہر چلی جاتی ہے تو ہم حکومت کی مخالفت میں اپنا سیاسی کیریئر داؤ پر کیوں‌ لگائیں اور کیوں نہ تحریک انصاف میں شامل ہو کر اپنے حلقوں‌ کے عوام کیلئے کوئی بہتر کارکردگی دکھا سکیں.

واضح رہے کہ اگرچہ ن لیگی قیادت مسلم لیگ ن کے اراکین اسمبلی کے تحریک انصآف میں شامل ہونے کی تردید کر رہے ہیں تاہم ان کے اپنے بیانات اس بات کی غمازی کر رہے ہیں کہ دال میں کچھ کالا نہیں بلکہ ساری دال ہی کالی ہے. مسلم لیگ ن کے رہنما رانا ثناء اللہ کا یہ کہنا وہ لوٹوں‌ کے گھروں‌ کا گھیراؤ کریں گے اور وہ اس میں سب سے آگے ہوں‌ گے، یہ بیان بھی واضح‌ کرتا ہے کہ ن لیگی اراکین تیزی سے تحریک انصاف میں شامل ہونے کی کوشش میں ہیں‌ اور تحریک انصاف کی قیادت سے باقاعدہ رابطے میں‌ ہیں.

ذرائع کا کہنا ہے کہ آنے والے دنوں میں‌ اس سلسلہ میں بڑے انکشافات کی توقع ہے اور کئی اراکین قومی و صوبائی اسمبلی پی ٹی آئی میں شامل ہونے کا اعلان کریں‌گے.

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.