مسلم ٹک ٹاک اسٹارز کی حمایت پر بھارتی اداکار اعجاز خان کو گرفتار کر لیا گیا

ممبئی: بھارت کے پانچ معروف مسلم ٹک ٹاک اسٹارز پر پابندی کے خلاف آواز اٹھانے پر ممبئی پولیس نے بالی ووڈ اداکار اعجاز خان کو گرفتار کرلیا گیا۔
ممبئی پولیس کا کہنا ہے کہ اعجاز خان نے فلم کے ڈائیلوگ کے ذریعے پولیس کا مزاق اڑایا ہے. یہ ہے وہ نوٹس جس کے تحت اعجاز کو گرفتار کیا گیا.

ٹک ٹاک پر "team 07” مقبول ترین مسلم ٹیم ہے اور بھارت کے ساتھ پاکستانیوں کے دلوں پہ بھی راج کر رہی ہے لیکن تبریز انصاری کے واقعہ کے بعد جب ٹک ٹاک سٹار فیصل شیخ نے تبریز کے حق کے لیے ویڈیو بنائی تو بھارتی حکومت نے فیصل شیخ کا اکاؤنٹ سسپینڈ کر دیا. Team 07 میں سے فیصل اور حسنین کا اکاؤنٹ سسپینڈ کیا گیا.

بھارت میں مسلمانوں پر تشدد اور ظلم و جبر کے واقعات آئے روز دیکھے جاتے ہیں لیکن خود کو سیکولر ملک قرار دینے والے بھارت میں ظلم کے خلاف آواز ابلند کرنا بھی جرم ہے۔ ظلم کے ہاتھوں چڑھنے والے تبریز انصاری نے اپنی جان گواہ دی اور اس کے حق کے لیے مقبول ٹک ٹاک اسٹارز کو آواز اٹھانا مہنگا پڑ گیا. بھارتی حکومت نے نہ صرف ان پر پابندی عائد کردی بلکہ اُن کے خلاف قانونی کارروائی بھی شروع کردی ہے.

مسلم ٹک ٹاک سٹارز کی حمایت کے لیے بالی ووڈ اداکارہ اعجاز خان نے آواز اٹھائی تو انہیں بھی قانونی شکنجے میں جکڑ لیا گیا اور ان کے خلاف بھی آیف آئی آر درج کرلی گئی ہے.

اعجاز خان نے پریس کانفرنس میں کہا کہ ٹیم 07‘ نے ٹک ٹاک پر دوسرے کی آواز میں ویڈیو بنائی جسے پہلے ہی 171 ملین لوگوں بنا چکے ہیں لیکن صرف پانچ لوگوں کو ٹارگٹ کیا جارہا ہے اور یہ نا انصافی ہے. اعجاز خان نے کہا کہ "ٹیم 07” کی ویڈیوز پر بالی ووڈ اسٹارز "شاہ رخ خان اور سلمان خان” کی اپڈیٹس سے کئی زیادہ ویوز آتے ہیں اور یہ ان کی محنت کا صلہ ہے.

اعجاز خان نے مزید کہا کہ بھارت میں جو ریپ کرتا ہے اسکے خلاف کوئی ایکشن نہیں لیا جاتا اور بالی ووڈ فلموں میں بھی کئی اداکاروں نے دہشت گرد کا کردار ادا کیا ہے. ٹیم 07 نے اپنی محنت سے اپنی جگہ بنائی ہے اور اپنا گھر چلا رہی ہے. ان کے خلاف ایکشن لینا سیاست ہے. بھارت نے اعجاز خان کے خلاف بھی مقدمہ درج کر دیا ہے.

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.