نیب کے بعد ایک اور ادارہ متحرک، 37 اہم سیاسی شخصیات کیخلاف تحقیقات کی منظوری

نیب کے بعد ایک اور ادارہ متحرک، 37 اہم سیاسی شخصیات کیخلاف تحقیقات کی منظوری

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق نیب کے بعد اینٹی کرپشن بھی سیاسی شخصیات کے خلاف متحرک ہو گیا ہے

ڈی جی گوہر نفیس کی سربراہی میں اینٹی کرپشن پنجاب کا اجلاس ہوا،جس میں پنجاب میں محکمہ اینٹی کرپشن کو بڑے قبضہ گروپوں کے خلاف فعال کرنے کا فیصلہ کیا گیا، قبضوں ، مختلف پراجیکٹس میں سرکاری خزانے کو نقصان پہنچانے کے الزامات ہیں

اینٹی کرپشن پنجاب کے ترجمان کے مطابق 37 سیاستدانوں کے خلاف تحقیقات کی منظوری دے دی گئی۔ جس میں رانا ثناءاللہ، رانا مشہود ، خواجہ آصف، رانا مبشر، افضل ہنجرا، اجمل ہنجرا، میاں ریاض، عباداللہ، سابق چیئرمین رانا محمد عظیم، اشرف عباس ڈوگر، ریاض گورائیہ، میاں ذوالفقار، روحیل اصغر، سہیل  شوکت، غزالی سلیم بٹ شامل ہیں

شہباز شریف عدالت پہنچ گئے،نیب کی شہباز شریف کی ضمانت کی درخواست مسترد کرنے کی استدعا

کن گراونڈز پر گرفتاری درکار ہے بتایا جائے؟ شہباز شریف کے وکیل کی عدالت سے استدعا

عدالت میں شہباز شریف کے وارنٹ گرفتاری پیش،شہباز شریف کے وکیل نے کی سیاسی گفتگو

شہباز شریف کی ممکنہ گرفتاری، سی سی پی او لاہور ہائیکورٹ پہنچ گئے، اہم حکم دے دیا

ترجمان کے مطابق جن کے خلاف تحقیقات کی منظوری دی گئی ان میں موجودہ ایم این ایز، ایم پی ایز شامل ہیں،

ڈی جی اینٹی کرپشن پنجاب کا کہنا ہے کہ سرکاری زمینوں پر کئی سال سے اربوں کی زمین پر قبضے ہیں۔

قبل ازیں اینٹی کرپشن پنجاب نے مسلم لیگ (ن) کے سابق ایم پی اے احسن رضا خان کو گرفتار کر لیا۔ اینٹی کرپشن پنجاب کے مطابق چونیاں سے سابق ایم پے اے احسن رضا خان کو گرفتار کیا جو 2 مختلف مقدمات میں مطلوب تھے۔

ڈپٹی کمشنر گوجرانوالہ کی درخواست پر اینٹی کرپشن پنجاب نے ن لیگ کے سابق وفاقی وزیر غلام دستگیر کے خلاف مقدمہ درج کرلیا۔ محکمہ ہائی وے کے ایس ڈی او اور تین ریکارڈ کیپرز بھی مقدمے میں نامزد ہیں۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.