fbpx

نریندر مودی اقوام متحدہ کے جنرل سیکرٹری سے ایسے ملے کہ ان کا موڈ ہی خراب ہو گیا ویڈیو وائرل

جہاں دنیا کورونا سے بچاو کے لیے سماجی فاصلے پر زور دے رہی ہے وہیں بھارتی وزیراعظم اس کی دھجیاں اڑا رہے تھے۔

باغی ٹی وی : بڑے بڑے رہنماؤں سے گلے ملنے کے شوقین بھارت کے وزیرِ اعظم نریندر مودی مودی ہمیشہ سے گلے ملنے کے لیے نہیں بلکہ گلے پڑنے کے لیے عالمی میڈیا پر پہنچانے جاتے ہیں اس بار بھی مودی نے ایسا ہی کیا گلاسگو کانفرنس میں بھی خود پر قابو نہ رکھ سکے اور اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیو گوتریس سے ایسے گلے ملے کہ گوتریس کے چہرے پرناگواری واضح ہوگئی۔

عالمی میڈیا کے مطابق گلاسگو کانفرنس میں یو این سیکریٹری سے ایسے ملے کہ ان کا موڈ ہی خراب ہو گیا، مودی انتونیو گوتریس کے اتنا قریب ہو گئے کہ انہیں خوب پیچھے کرنا پڑا، اور ساتھ ہی یواین سیکریٹری کے چہرے سے ناگواری کا اظہار صاف دکھائی دیا نریندر مودی اسٹیج پر آئے تو انہوں نے پہلے برطانیہ کے وزیراعظم بورس جانسن سے ملاقات کی پھر وہ اقوامِ متحدہ کے جنرل سیکریٹری کی جانب بڑھے۔

جبکہ کانفرنس میں مودی ہر رہنما سے سے سیدھا جا کر گلے ہی ملے جن کی تصاویر عالمی میڈیا نے شئیر کیں، ان میں برطانوی وزیراعظم بوروس جانسن، کینیڈین وزیراعظم جسٹن ٹروڈو بھی شامل ہیں۔

یہ پہلا موقع نہیں ہے جب مودی عالمی رہنماوں کو دیکھ کر بے قابو ہوئے ہوں، وہ بھارت سے جاتے ہی یا بھارت کے دورے پر آئے کسی بھی رہنما کو دیکھ کر اپنے آپ پر قابو کھو بیٹھتے ہیں۔

واضح رہے کہ گلاسگو کانفرنس میں اقوام متحدہ کے جنرل سیکرٹری انتونیو گوتریس نے خبردار کیا ہے کہ آگ لگا کر، کھدائیاں کر کے، سرنگیں بنا کر، زمین کو نقصان پہنچا کر انسان اپنی قبریں خود کھود رہے ہیں۔

گلاسگو موسمیاتی کانفرنس سے خطاب میں انتونیو گوتریس کا کہنا تھا کہ کرہ ارض اور انسانیت کو بچانے کے لیے اقدامات کرنے ہوں گے۔

کانفرنس سے تبت کے بدھ متوں کے روحانی پیشوا دلائی لامہ نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ زمین کیلئے سائنسی فہم پر مبنی حقیقت پسندانہ اقدام کرنے کی ضرورت ہےکيتھولک عیسائیوں کے مذہبی پيشوا پوپ فرانسس نے کہا کہ اب ایک ساتھ کام کرنے کا وقت ہے ہالی وڈ سپر اسٹار لیونارڈو ڈی کیپریو نے کہاکہ دنیا اس وقت ماحولیاتی بحران کا شکار ہے ، اس وقت دنیا عالمی لیڈرز کو دیکھ رہی ہے۔

دوسری جانب ترک صدر رجب طیب اردوان نے برطانیہ کی جانب سے مطلوبہ سکیورٹی اور پروٹوکول نہ ملنے پر اسکاٹ لینڈ کے شہرگلاسگو میں ہونے والی عالمی موسمیاتی کانفرنس میں شرکت منسوخ کردی تھی ترک خبر ایجنسی کے مطابق ترک صدر نے اٹلی میں جی ٹوئنٹی کانفرنس کے بعدگلاسگو میں موسمیاتی کانفرنس میں شرکت کرنا تھی تاہم انہوں نے مطلوبہ سکیورٹی نہ ملنے پر گلاسگو کانفرنس میں شرکت منسوخ کردی اردوان گلاسگو میں موسمیاتی کانفرنس میں شرکت کیےبغیر اٹلی سے واپس ترکی چلےگئے۔

خیال رہےکہ برطانیہ کی میزبانی میں موسمیاتی تبدیلی پر عالمی کانفرنس گلاسگو میں ہورہی ہے جس میں بین الاقوامی لیڈرز ، تجزیہ کار اور تاجر شریک ہیں۔

Facebook Notice for EU! You need to login to view and post FB Comments!