نواز شریف کی انسولین کا کیا ہوا؟ کمرے کی بجلی کتنے گھنٹے بند رکھی گئی؟ مریم نواز کا بڑا الزام

پاکستان مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز نے الزام عائد کیا ہے کہ جیل میں ان کے والد نواز شریف کی بجلی 17 گھنٹے تک بند رکھی گئی،

نوازشریف کی بلڈ شوگر دس روز سے چیک نہیں کی گئی، میڈیکل رپورٹس بھی نہیں دی جارہیں، مریم نواز

باغی ٹی وی کی رپورٹ‌کے مطابق آج پریس کانفرنس کے دوران مریم نواز کا کہنا تھا کہ مجھے جمعرات کو میاں‌ نواز شریف نے بتایا تھاکہ 17 گھنٹے ان کی بجلی بند رکھی گئی، یہ چھوٹے پن کی انتہا ہے کہ سلیکٹڈ وزیراعظم کہہ رہے ہیں کہ میں ان کا اے سی بند کردونگا جبکہ انکے اہنے سرکاری ڈاکٹرز کہہ رہے ہیں کہ انکے کمرے کا ٹیمپریچر مینٹین ہوناچاہیے،

انہوں نے کہاکہ جیل میں‌ میاں صاحب کے ڈاکٹر اور فیملی کو بغیر کنسلٹ کیے ہوئے نہ صرف ان کی انسولین بند کردی گئی بلکہ انکو نئی ٹیبلٹ دے دی اور نئی انسولین ایڈ کردی ہے، ڈاکٹرز کافی مرتبہ کہہ چکے ہیں کہ نیاں صاحب کو ہسپتال داخل کروانے کی ضرورت ہے نہ صرف انکے ٹیسٹ ہونے چاہیے بلکہ ان کے بلڈشوگر بلڈ پریشر اور انجائنا کی منیجمنٹ ہسپتال میں رکھ کر کی جانی چاہیے لیکن کوئی بات نہیں‌ سنی جارہی،

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.