نواز شریف نے جیل سے پارٹی رہنماؤں‌ کو کیا خصوصی ہدایات جاری کیں؟ بڑی خبر آ گئی

پاکستان مسلم لیگ (ن) کے قائد نواز شریف نے کہا ہے کہ پی ٹی آئی حکومت کی طرف سے جسٹس قاضی فائز عیسٰی کے خلاف سپریم جوڈیشل کونسل میں‌ ریفرنس دائر کرنا سراسر نا انصانی ہے، حقیقت یہ ہے کہ اس وقت جمہوریت پسند ججز کو چن چن کر نشانہ بنایا جارہا ہے۔

باغی ٹی وی کی رپورٹ‌ کے مطابق کوٹ لکھپت جیل لاہور میں مسلم لیگ ن کے رہنماؤں سے گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ مسلم لیگ (ن) نے عدلیہ بچاؤ تحریک میں پہلے بھی اہم کردار ادا کیا تھا اور اب بھی عدلیہ پر حکومتی حملے ناکام بنانے میں کسی کمزوری کا مظاہرہ نہ کیا جائے. ان کی پارٹی عدلیہ کے معزز جج صاحبان پر حکومتی الزامات کے پلندے کو بے نقاب کرے اور بھرپور مزاحمت کرے۔

رپورٹ کے مطابق سابق وزیر اعظم نواز شریف نے پارٹی رہنماؤں‌کو ہدایات کی کہ مسلم لیگ (ن) کے ارکان قومی اسمبلی اور سینیٹ کا مشترکہ اجلاس فوری طور پر بلایا جائے. ادھر مسلم لیگ ن کی سیکرٹری اطلاعات نے بھی اخبار نویسوں‌ سے بات چیت کے دوران اس امر کی تصدیق کی ہے کہ نواز شریف نے یہ پیغام دیا ہے کہ عدلیہ کی آزادی، تحفظ اور دفاع کے لئے ڈٹ جائیں. ان کا کہنا تھا کہ نواز شریف ملک کی سالمیت کیلئے ہر سزا برداشت کرنے کیلئے تیار ہیں.

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.