fbpx

نواز شریف کو فرار کروانے والے پروفیسر محمود ایاز کے نئے کارنامے،سنئے مبشر لقمان کی زبانی

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق سینئر صحافی و اینکر پرسن مبشر لقمان نے کہا ہے کہ کیسے وزیراعلیٰ عثمان بزدار یاسمین راشد کی ناک کے نیچے چند لوگ اپنی بوٹی کے لئے پوری گائے ذبح کر رہے ہیں اور بار بار کر رہے ہیں

مبشر لقمان کا کہنا تھا کہ سروسز ہاپسٹل اور سروسز انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز میں کس طرح عوام کا پیسہ لوٹا جا رہا ہے اورحکومت کو چونا لگایا جا رہا ہے،اس میں بڑے نام آتے ہیں، پروفیسر محمود ایاز،پروفیسر وارث فاروق، ارشد بٹ اور دیگر نے کیسے ملکر سروسز میں کرپشن کا بازار گرم کیا ہوا ہے، پروفیسر محمود ایاز سمز کے پرنسپل ہیں، پروفیسر وارث اور یہ دونوں قریبی دوست ہیں،اور نیشنل ہاسپٹل ڈیفنیس میں بھی ایک ساتھ پریکٹس کرتے ہیں، پروفیسر محمود کے حکم پر ہی پرو فیسر وارث اور فائزہ شبیر جو دونوں کلاس فیلو ہیں، نواز شریف کی رپورٹ میں دو نمبری کی اور باہر جانے میں مدد کی

مبشر لقمان کا مزید کہنا تھا کہ پروفیسر محمود بڑے بڑے لوگوں کو اوبلائیز کرتے ہیں،اور پھر فائدے بھی ہوتے ہیں، یہی وجہ ہے کہ کوئی بھی میڈیا ہاؤس انکی کرپشن کی بات نہیں کرتا، سروسز میں کرپشن اور من پسند لوگوں کو نوازے بارے بتاؤں گا،پروفیسر محمود نے پروفیسر وارث فاروقہ کو ہی پرچیز کمٹی کا ہیڈ بنایا ہوا ہے، وارث فاروقی نے من پسند آغا افضل کو رکھا ہوا ہے،جو سروسز میں کئی سالوں سے کام کرتے ہیں وہ جانتے ہیں کہ چند سال قبل آغا افضل بائیک پر آتا تھا اب بی ایم ڈبلیو پر گھومتا ہے، ہسپتال میں پرچیزنگ آغا خان کے ذریعے کی جاتی ہے اسنے بیوی اور کزن کے نام کمپنیز رجسٹر کروائی ہوئی ہیں جن کے ذریعے کاروبار ہوتا ہے جب کوئی ٹینڈر آتا ہے تو ریٹ پہلے ہی بتا دیا جاتا ہے اس وجہ سے سارے ٹینڈر انہی کو ملتے ہیں

مبشر لقمان کا مزید کہنا تھا کہ گریوینس کمیٹی بھی ہے اسکے ہیڈ ڈاکٹر عمران ہیں،اور وہ میڈیسن ڈیپارٹ کے ہیڈ ہیں، انکے پاس کوئی شکایت جائے تو ایکشن نہیں لیتے جو کرپشن چل رہی ہو وہ ویسے ہی چل رہی ہوتی ہے،ٹیکنیکل کمیٹی کے انچارج ڈاکٹر وسیم حیات ہیں جو خود ہی پرچیز اور انسپکشن کرتے ہیں، انکو نہیں پوچھا جاتا کہ جو چیز خریدی جا رہی ہے وہ صحیح ہے یا نہیں،کمیشن ملتا ہے یہ سب کچھ ہو رہا ہے

مبشر لقمان کا مزید کہنا تھا کہ سروسز میں جو ریڈیالوجی ٹاور بن رہا ہے وہ کرپشن کی اعلیٰ مثال ہے، جن ڈاکٹرز کو پروجیکٹ ہیڈ لگایا گیا اس میں کسی ضابطے کا خیال نہیں رکھا گیا،ڈاکٹر لیاقت اور حنیف کو ریٹائرڈ ہونے کے بعد دو سے ڈھائی لاکھ ماہانہ تنخواہ پر بغیر اشتہار کے اپنی مرضی سے لگا دیا گیا، آغا افضل کے ذریعے ہی اس ٹاور کی چیزیں پرچیز کی جا رہی ہیں جو مہنگے داموں خریدی جا رہی ہیں، جب انکو لگتا ہے کہ کرپشن پکڑی جانی ہے تو فوری رجسٹر منگوا کر کاغذات میں ردوبدل بھی کر دی جاتی ہے، اسکے علاوہ ملازمین سے پیسے لے کر نوازا جا رہا ہے،

مبشر لقمان کا مزید کہنا تھا کہ لاہور ہائیکورٹ نے فیصلہ دیا کہ 49 ملازمین کو جو کنٹریکٹ پر تھے انکو مستقل کیا جائے، جو لوئر گریڈ کے ملازم تھے انکو ارشد بٹ جو پیرا میڈیکل ایسوسی ایشن کا صدر ہے انہوں نے پیسے لے کر بی ایس 15 مین اپ گریڈ کروا دیا، جب کچھ ملازمین نے وزیراعظم پورٹل پر شکایت کی تو پھر پرنسپل آفس سے کئی لیٹر جاری کیے گئے، پرنسپل آفس نے کئی لیٹر جاری کئے کہ اب ادارہ ان ملازمین کا شاٹ ہینڈ ٹیسٹ لے گا، 3 لوگوں نے ٹیسٹ پاس کئے باقی بھی تنخواہ وصول کرتے رہے جو اسکے اہل نہیں، پروفیسر محمود سے اس بارے میں سوال کیا جائے تو وہ انجان بن جاتے ہیں، یوسف ندیم ڈائریکٹر فنانس کو گریڈ 18 سے 19 میں پروموٹ کیا گیا، پانچ سے 6 سال تک وہ تنخواہیں مراعات لیتے رہے،اور جب یہ کیس منظر عام پر آیا تو محمود نے خود کو بچانے کے لئے کہہ دیا کہ پہلے والے گریڈ میں چلے جائیں، پرنسپل سے سوال نہین ہونا چاہئے کہ اسکو کیسے اپ گریڈ کیا گیا

مبشر لقمان کا مزید کہنا تھا کہ وائی ڈی اے والے میرے دوست ہیں لیکن وہ وائی ڈی اے جو ایک وقت میں سینئرز کی کرپشن ایکسپوز کرتی تھی، اب شاید کچھ لوگ انکے ساتھ ملے ہوئے ہیں،موجودہ وائی ڈی اے سروسز کے صدر خود تو ملک سے باہر چلے گئے لیکن یہاں نہ صرف انکی حاضری لگتی رہی بلکہ تنخواہ بھی وصول کرتے رہے، انکی حاضری لگتی رہی، یہ سلسلہ بڑی دیر چلتا رہا، آرتھو پیڈکس کے ہیڈ نے سوال اٹھایا کہ یہ ڈاکٹر ہسپتال نہیں آ رہا تو اسکی تنخواہ کیسے چل رہی ہے،تو پرنسپل کی آشیر باد پر اسکا ٹرانسفر کسی اور ڈیپارٹ میں کر دیا گیا جب یہ بات چھپانی مشکل ہو گئی تو انکا استعفیٰ کا لیٹر آگیا،

نیب کی نواز شریف کی حاضری سے استثنیٰ کی درخواست کی مخالفت،عدالت نے بڑا حکم دے دیا

نواز شریف کی ضمانت میں توسیع کیوں نہیں کی؟ راجہ بشارت نے کیا اہم انکشاف

مریم نواز اور کیپٹن ر صفدر میں ہونے لگی ہے جلد جدائی،خبر سے کھلبلی مچ گئی

مریم نواز ایک بار پھر "امید” سے، کیپٹن ر صفدرخوشی سے نہال

مریم نواز عدالت پہنچ گئی، بہارہ کہو میں کارکنان نے کیا استقبال

عدالت پہنچنے پر مریم نواز نے کارکنان کے لئے جاری کیا حکم،ن لیگی رہنماؤں کو روک دیا گیا

میری ضد ہو گی کہ نواز شریف یہ کام کریں، مریم نواز کی غیر رسمی گفتگو

نواز شریف ضمانت پر نہیں، وکیل کا عدالت میں اعتراف،ہمیں سزا معطلی سے متعلق بتائیں، عدالت

نواز شریف کے لندن ڈاکٹر کی رپورٹ باغی ٹی وی نے حاصل کر لی

نواز شریف کو سرنڈر کرنا ہو گا، اگر ایسا نہ کیا تو پھر…عدالت کے اہم ریمارکس

نواز شریف حاضر ہو، اسلام آباد ہائیکورٹ نے طلبی کی تاریخ دے دی

مبشر لقمان کا مزید کہنا تھا کہ جب استعفیٰ دے کر گئے تو اکاؤنٹ ڈیپارٹ کو کیوں نہیں بتایا گیا تا کہ وہ کام کریں، لیکن اکاؤنٹ سے تنخواہ جاتی رہی، استعفے کے باوجود تنخواہ آتی رہی، تمام تفصیلات میرے پاس موجود ہیں،یہ چند کرپشن اور بے ضابطگیاں ہیں جو سمز میں کی جا رہی ہے، بہت سارے ڈیپارٹ کی تفصیل موجود ہے کہ وہاں کیا کچھ ہو رہا ہے آنے والی ویڈیو میں اسکو شیئر کروں گا