fbpx

نائجیرین ایئر لائن نے اپنی پروازیں معطل کر دیں

نائجیرین ایئر لائن پیر کے روز سے اپنی تمام اندرونِ ملک پروازیں معطل کر رہی ہے۔ اس فیصلے کی وجہ جیٹ فیول کی بڑھتی ہوئی قیمتوں کو قرار دیا گیا ہے۔

نائجیرین ایئر لائن کو چلانے والے ادارے کے مطابق جیٹ فیول کی قیمت میں چار گنا اضافہ ہو چکا ہے جو 197 نیرا (نائجیرین کرنسی) فی ليٹر سے بڑھ کر 700 نیرا تک پہنچ گئی ہے جبکہ امریکی ڈالر میں یہ قیمت 0.45 سے بڑھ کر 1.70 بنتی ہے۔

ادارے کے مطابق جیٹ ایندھن کی قیمتوں میں اضافے سے اب ایک گھنٹے کی پرواز کے اخراجات ایک لاکھ 20 ہزار نیرا یعنی 289 امریکی ڈالر تک پہنچ چکے ہیں جو نہ پہلے سے مشکلات کے شکار نائجیرین عوام برداشت کر سکتے ہیں اور نہ ہی دنیا کی کوئی اور ایئر لائن۔

دوسری جانب نائجیرین ایوی ایشن نے ادارے پر زور دیا ہے کہ وہ نائجیرین عوام اور بین الاقوامی مسافروں کی اس فیصلے کے اثر سے دوچند ہونے والی مشکلات کو مدنظر رکھتے ہوئے اپنے فیصلے پر نظرثانی کرے۔

واضح رہے کہ روس کی جانب سے رواں سال 24 فروری کو یوکرین پر حملے کے بعد سے عالمی سطح پر ایندھن کی قیمتوں میں اچھا خاصا اضافہ ہوا ہے جبکہ مغربی اتحادی ممالک کی روسی خام تیل اور قدرتی گیس پر عائد پابندیوں نے ایندھن کی قیمتوں کو مزید پر لگا دیے ہیں۔

اگرچہ نائجیریا کی اپنی 14 لاکھ بیرل یومیہ خام تیل کی پیداوار ہے تاہم وہ بہت کم مقدار میں خام تیل کو ریفائن کرتا ہے اور اُس کا شمار اُن ممالک میں ہوتا ہے جن کا تقریباً تمام تر انحصار درآمد شدہ ایندھن پر ہے۔ اسی وجہ سے نائجیریا میں طویل لوڈ شیڈنگ کا سلسلہ بھی بڑھ گیا ہے۔