fbpx

کشمیریوں کے ماورائے عدالت قتل کے خلاف مکمل ہڑتال:وادی بھرمیں شہدا کے غائبانہ نمازجنازہ

سرینگر:مقبوضہ کشمیر:کشمیریوں کے ماورائے عدالت قتل کے خلاف مکمل ہڑتال:وادی بھرمیں شہدا کے غائبانہ نمازجنازہ ،اطلاعات کے مطابق بھارت کے غیر قانونی زیر قبضہ جموںوکشمیر میں بھارتی فوجیوں کے ہاتھوں سرینگر میں چار شہریوں کے ماورائے عدالت قتل کے خلاف آج پورے مقبوضہ علاقے میں مکمل ہڑتال کی جارہی ہے ۔

کشمیر میڈیاسروس کے مطابق ہڑتال کی کال کل جماعتی حریت کانفرنس کے غیر قانونی طور پر نظر بند چیئرمین مسرت عالم بٹ اور میر واعظ فاروق کی سربراہی میں قائم حریت فورم نے دی ہے جبکہ تقریباً تمام حریت رہنمائوں اور تنظیموں کے علاوہ ہائیکورٹ بارایسوسی ایشن نے اس کی حمایت کی ہے۔

مسرت عالم بٹ نے نئی دلی کی تہاڑ جیل سے ایک پیغام میں کشمیریوں سے اپیل کی ہے کہ وہ آج نماز جمعہ کے بعد شہداء کی غائبانہ نماز جنازہ ادا کریں اور احتجاجی مظاہرے کریں ۔ اس اپیل کے بعد وادی بھر میں ان شہدا کی غائبانہ نماز جنازہ ادا کی گئی ہے ،

انہوں نے لوگوں سے یہ بھی اپیل کی کہ وہ سرینگر میں شہید الطاف احمد بٹ اور ڈاکٹر مدثر گل اور ضلع رام بن کے علاقے بانیہال میں شہید عامر احمد کے گھر وں کی طرف مارچ کریں۔حریت چیئرمین نے شہریوں کے ماورائے عدالت قتل کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا کہ بھارتی فوجیوں نے سرینگر میں چار بے گناہ شہریوں کو وحشیانہ طور پر قتل کیا ۔

انہوں نے حیدر پورہ میں شہریوں کے بہیمانہ قتل کی بین الاقوامی فوجداری عدالت سے تحقیقات کرانے کا مطالبہ کیا۔ انہوں نے اقوام متحدہ اور انسانی حقوق کے عالمی اداروں سے اپیل کی کہ وہ بھارتی فوجیوں کی طرف سے مقبوضہ علاقے میں شہریوں کے قتل عام اور بدترین جنگی جرائم کا نوٹس لیں۔