اور ڈاکٹر ظفر مرزا بھی کرونا کا شکار ہو گئے

0
50

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق معاون خصوصی برائے صحت ظفر مرزا کورونا وائرس میں مبتلا ہوگئے

وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر ظفر مرزا کا کہنا ہے کہ ڈاکٹرز کی ہدایت پر خود کو آئیسو لیٹ کردیا ہے،کورونا کے معمو لی علامات تھیں، ٹیسٹ کروانے پر کرونا مثبت آیا جس کے بعد خود کو آئسولیٹ کر لیا ہے

واضح رہے کہ پاکستان میں کرونا مریضوں میں اضافہ ہو رہاہے، وزیرخارجہ شاہ محمو دقریشی کو بھی کرونا ہو چکا ہے، قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف شہباز شریف کا گزشتہ روز کرونا ٹیسٹ منفی آ گیا

پاکستان میں کرونا وائرس کا پھیلاؤ جاری ہے، گزشتہ 24 گھنٹوں میں 50 مریض جاں بحق ہوو گئے ہیں جبکہ 3344 نئے مریض سامنے آئے.

پاکستان میں کورونا وائرس سے اموات کی مجموعی تعداد 4ہزار762 ہوگئی ہے جبکہ ملک بھر میں کرونا کے 2لاکھ 31 ہزار 818 کیسز رپورٹ ہو چکے ہیں۔

کرونا وائرس کے حوالہ سے بنائے گئے نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹرکی جانب سے جاری کردہ اعدادو شمار کے مطابق گزشتہ24 گھنٹوں میں کورونا سے صرف50 افراد جاں بحق ہوئے جن میں سے 44 مریض ہسپتالوں اور6 کا انتقال گھروں میں ہوا. بلوچستان اور گلگت بلتستان میں گزشتہ روز کورونا وائرس سے کوئی موت رپورٹ نہیں ہوئی۔ پاکستان میں صحتیاب افراد کی تعداد ایک لاکھ 31 ہزار649 ہوگئی ہے.

نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹے میں 22 ہزار 271 ٹیسٹ کیے گئے اور اب تک ملک میں 14 لاکھ 20 ہزار 623 ٹیسٹ کیے جا چکے ہیں۔ سندھ میں کورونا کیسز کی تعداد94ہزار528، پنجاب81ہزار963، خیبرپختونخوا28 ہزار 116، بلوچستان 10ہزار 814، اسلام آباد13ہزار494، آزاد جموں وکشمیرایک ہزار342 اور گلگت میں کورونا کیسز کی تعدادایک ہزار561ہوگئی ہے۔

کورونا وائرس کے باعث آزاد کشمیر میں 35، بلوچستان میں 123، گلگت میں 28، اسلام آباد میں 134، خیبر پختونخوا میں ایک ہزار20، پنجاب میں ایک ہزار 871اور سندھ میں ایک ہزار501 افراد جاں بحق ہو چکے ہیں

 

Leave a reply