fbpx

سیلاب متاثرہ علاقوں میں پاک فضائیہ کی جانب سے20 ٹینٹ سینٹر، 54 ریلیف کیمپس قائم

پاک فضائیہ کی جانب سے خیبرپختونخوا، سندھ، بلوچستان اور جنوبی پنجاب کے سیلاب سے متاثرہ علاقوں میں امدادی کاروائیاں اور ڈیزاسٹر ریلیف آپریشنز جاری ہے

ترجمان پاک فضائیہ کے مطابق پاک فضائیہ کی ریجنل کمانڈز اور ائیر بیسز سیلاب زدہ علاقوں میں سیلاب متاثرین کو خوراک، رہائش، طبی سہولیات اور ضروری سامان کی فراہمی میں سرگرم عمل ہیں پاک فضائیہ نے سیلاب متاثرین کے لیے 4848 خیمے اور 377457 تیار کھانے کے پیکٹ فراہم کیئے پاک فضائیہ نے سیلاب متاثرین میں 3095.25 ٹن خشک راشن، جبکہ 231,693 لیٹر پینے کا صاف پانی فراہم کیا۔ پاک فضائیہ نے 45 میڈیکل کیمپس قائم کئے ہیں جہاں اب تک 56559 مریضوں کا طبی معائنہ بھی کیا جا چکا ہے پاک فضائیہ کی جانب سے 19807 افراد کی رہائش کے لیے 20 ٹینٹ سینٹر اور 54 ریلیف کیمپس بھی قائم کیے گئے۔ پاک فضائیہ کے ہیلی کاپٹرز اور ٹرانسپورٹ فلیٹ نے 255 پروازیں کیں اور سیلاب سے متاثرہ علاقوں میں پھنسے 99 افراد کو باحفاظت نکالا۔

متحدہ عرب امارات کے حکام کا آرمی چیف سے رابطہ،سیلاب زدگان کیلیے امداد بھجوانے کا اعلان

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سے برطانوی ہائی کمشنر کرسچن ٹرنر کی ملاقات

سیلابی پانی کے بعد لوگ مشکلات کا شکار ہیں کھلے آسمان تلے مکین رہ رہے ہیں

فوج کو سیاست میں نہ گھسیٹا جائے ، دعا ہے علی سد پارہ خیریت سے ہو،ترجمان پاک فوج

طاقت کا استعمال صرف ریاست کی صوابدید ہے،آپریشن ردالفسار کے چار برس مکمل، ترجمان پاک فوج کی اہم بریفنگ

قبل ازیں سربراہ پاک فضائیہ نے شمالی سیکٹر میں پاک فضائیہ کی آپریشنل سکردو ائیر بیس کا معائنہ کیا۔ اس موقع پر ایئر چیف مارشل ظہیر احمد بابر سدھو کا کہنا تھا کہ پاک فضائیہ کی جانب سے انفراسٹرکچر اور عسکری صلاحیتوں میں اضافہ پاک فضائیہ کی آپریشنل صلاحیتوں کو توسیع دینے اور عسکری حکمت عملی میں اہم سنگِ میل کی حیثیت رکھتا ہے۔ خطے کی موجودہ صورتحال اس امر کی متقاضی ہے کہ ہمیں کسی بھی بیرونی یا اندرونی سیکورٹی چیلنج کا جواب دینے کے لیے ہمہ وقت تیار رہنا ہوگا۔ خلائی، الیکٹرانک اور سائبر وارفیئر کے ساتھ ساتھ مخصوص تکنیکی علوم میں ترقی، آرٹیفیشل انٹیلیجنس کے ساتھ ملکر قومی سلامتی کے روایتی ماحول پر بھرپور طریقے سے اثرانداز ہو رہی ہیں۔ پاک فضائیہ، افواجِ پاکستان کے شانہ بشانہ مادر وطن کی خودمختاری کو لاحق کسی بھی خطرے کا مقابلہ کرنے کے لیے ہمہ وقت تیار ہے۔ائیر چیف نے پاک فضائیہ کے اہلکاروں کی حوصلہ افزائی اور انکی پیشہ ورانہ مہارت کی تعریف کی