fbpx

پیسوں کی ضرورت کے باعث ایسی فلمیں بھی کیں جنکو بعد میں خود بھی نہیں دیکھا:سونالی باندرے

نوے کی دہائی کی خوبصورت اور سمارٹ اداکار جنہوں نے حال ہی میں ایک انٹرویو دیا ہے اس میں انہوں نے کچھ ایسی باتیں کیں جو شاید پہلے کبھی نہ کی ہوں ۔انہوں نے بتایا کہ ان کے گھر کو چلانے کی ذمہ داری ان پر تھی گھر کا کرایہ معاملات زندگی چلانے کےلئے ان کو شوبز انڈسٹری کا حصہ بننا پڑا اور جب شوبز میں آئی تو یہاں ان کا کوئی جاننے والا نہ تھا نہ ہی کبھی خاندان کے کسی فرد نے دور دور تک فلموں میں کام کیا تھا ۔پیچھے مڑ کر دیکھتی تھیں تو گھریلو ذمہ داریاں دل پریشان کر دیتی تھیں اس لئے سونالی نے سوچا کہ جیسے بھی کردار ملیں گے بس کرنے ہیں لہذا وہ ایسا ہی کرتی گئیں ۔سونالی بتاتی ہیں کہ کیرئیرکے شروع میں ایسی فلموں میں کام کیا جن کو شاید بعد میں ،میں نے خود بھی نہیں دیکھا ،بلکہ ایسا بھی ہوا کہ مجھے ایسے کردار دئیے جاتے جن کے بغیر بھی کہانی چل سکتی تھی لیکن میں کرتی گئی ۔سونالی بتاتی ہیں کہ مجھے ایسے کردار کرنا بہت عجیب لگتا تھا لیکن ضروریات کے منہ کھلے دیکھ کر خاموش ہوجاتی تھی۔سونالی نے اس انٹرویو میں اپنی کسی فلم کا نام نہیں بتایا لیکن یہ ضرور کہا کہ میں نے بہت بری فلموں میں بھی کام کیا ایسی فلمیں جن کو نہ بعد میں دیکھا اور جن کو جب شوٹ کررہی تھی تب بھی برا سمجھتی تھی ۔

یاد رہے کہ سونالی باندے کا شمار نوے کی دہائی کی کامیاب ہیروئینز میںہوتا ہے انہوں اُس دور کے بڑے ہیروز کے ساتھ کام کیا ۔چند برس قبل سونالی کینسر جیسے موذی مرض مین مبتلا ہو گئیں تھیں انہوں نے اپنا علاج امریکہ سے کروایا اور اس مرض کو شکست دیکھ کر بھارت واپسی کی