fbpx

پاک افغان ٹرانزٹ ریل لنک پراجیکٹ:پشاور،کابل،ترمذ ازبکستان تک مشترکہ سروے مکمل

کابل:پاک افغان ٹرانزٹ ریل لنک پراجیکٹ:پشاور،کابل،ترمذ ازبکستان تک مشترکہ سروے مکمل،اطلاعات کے مطابق پاک افغان ٹرانزٹ ریل لنک پراجیکٹ میں اہم پیش رفت ہوئی ہے۔

754 کلومیٹر طویل ریلوے ٹریک پشاور جلال آباد سے کابل، مزار شریف اور ترمذ تک جائے گا۔ 5 ارب ڈالر کے منصوبے کے لئے پشاور، کابل، ترمذ ازبکستان تک مشترکہ سروے مکمل کرلیا گیا۔

افغان ٹرانزٹ ریل لنک معاہدہ کی تقریب،وزیراعظم نے کس ملک کے دورہ کا اعلان کر دیا؟

مشترکہ سروے میں پاکستان ریلوے کی 3 رکنی ٹیم نے حصہ لیا جس میں چیف انجینئر قمرزمان ٹیم کے سربراہ،ڈپٹی چیف فرمان غنی اور معلم آفریدی شامل تھے۔

افغان شہریوں کی واپسی کے لئے چمن، طورخم بارڈر کتنے روز کیلیے کھول دیا گیا؟

سی ای او فرخ تیمور غلزئی کا کہنا ہے کہ پاکستان ریلوے کے لئے مشترکہ سروے کی تکمیل اہم سنگ میل ہے۔

واضح رہے کہ گزشتہ مہینے پاکستان اور افغانستان کے درمیان افغان دارالحکومت کابل میں منعقدہ مذاکرات میں دو طرفہ تجارت بڑھانے، تاجروں کو ٹرانزٹ ٹریڈ میں درپیش مشکلات ختم کرنے سمیت بس سروس بھی بحال کرنے کا فیصلہ کیا گیا تھا۔

پاکستان چیمبر آف کامرس کے صدر کی رزاق داؤد سے ملاقات، پاک افغان بارڈر ٹریڈ

اعلامیے میں کہا گیا تھا کہ پشاور تا کابل اور کوئٹہ تا قندھار کے درمیان بس سروس شروع کرنے کے لیے اقدامات کیے جارہے ہیں اور کوشش کی جا رہی ہے کہ بس سروس اس سال شروع کر دی جائے۔

573 کلومیٹر طویل ریلوے لنک بچھایا جائے گا، اس ٹریک پر 27 سٹیشن، 912 مختلف النوع تعمیرات اور سات ٹنل تعمیر کیے جائیں گے۔