fbpx

غیر ضروری مقدمہ دائر کرکے وقت ضائع کرنے پر پاکستان کسٹمز کو 50 ہزار روپے جرمانہ

غیر ضروری مقدمہ دائر کرکے وقت ضائع کرنے پر پاکستان کسٹمز کو 50 ہزار روپے جرمانہ

سپریم کورٹ نے نان کسٹم پیڈ گاڑی کی مالک کو حوالگی کے خلاف پاکستان کسٹمزکی اپیل خارج کردی۔عدالت نے غیر ضروری مقدمہ دائر کرکے وقت ضائع کرنے پر پاکستان کسٹمز کو 50 ہزار روپے جرمانہ کرتے ہوئے مقدمہ واپس لینے کی استدعا مسترد کردی ہے۔ جسٹس قاضی فائزعیسیٰ نے ڈی جی کسٹمز کومخاطب کرتے ہوئے کہا کہ کیا آپ قانون سے بالاتر ہیں؟ 5 سال گاڑی ویئرہائوس میں کھڑی خراب ہوگئی۔ کیا مالک کا نقصان آپ پورا کرینگے؟ دوران سماعت عدالتی حکم پر ڈی جی کسٹمزانٹیلی جنس فیض احمد عدالت میں پیش ہوئے۔ جسٹس قاضی فائزعیسیٰ نے استفسار کیا کہ آپ عدالتی احکامات کی خلاف ورزی کیوں کررہے ہیں؟

تین عدالتوں نے حکم دیا کہ گاڑی مالک کے حوالے کریں۔پانچ سال سے کسٹم نے شہری کی گاڑی پکڑ کر بند کررکھی ہے۔ڈی جی کسٹمز بولے یہ گاڑی حوالگی کا بہت منفرد کیس ہے۔جسٹس محمد علی مظہرنے کہا کہ گاڑی حوالگی میں کیا منفرد ہے؟ کلیکٹر لکھ رہا ہے کہ مالک نے ٹیکس اور ڈیوٹیز ادا کی۔۔جسٹس قاضی فائزعیسیٰ کا کہنا تھا کہ 97 ماڈل کی گاڑی کی مالیت کیا ہوگیا؟
مزید یہ بھی پڑھیں؛
مبشر لقمان کی دہائی، ابھی نہیں تو کبھی نہیں۔جنرل فیض بے نقاب،وائٹ پیپر،خطرے کی گھنٹیاں
ایران میں خواتین کیلئے گاڑیوں میں سر پر اسکارف لازمی پہننے کی وارننگ دوبارہ جاری
ملک بھرمیں گزشتہ 24 گھنٹے کےدوران کورونا سے دو اموات رپورٹ
متعدد ممالک کی چین سے آنیوالے مسافروں کیلئے شرط،چینی حکومت کا شدید ردعمل
ڈی جی کسٹمز نے بتایا کہ قبضے میں لی گئی گاڑی کی مالیت 20 سے 25 لاکھ روپے ہوگی۔جسٹس قاضی فائزعیسیٰ نے کہا کہ گاڑی کی مالیت سے زیادہ رقم اور وقت کیسز پر خرچ کردیا۔نان کسٹم پیڈ گاڑی پاکستان میں نہ آئے تو آپ بارڈر کو محفوظ کیوں نہیں بناتے؟ لوگ اور سامان بلا روک ٹوک آجا رہے ہوتے ہیں، کسٹمز کے لوگ کیا تفریح کررہے ہوتے ہیں ؟