ڈیجیٹل مردم شماری ،پاکستان کی آبادی 241.49 ملین تک پہنچ گئی ،ادارہ شماریات

پاکستان کی آبادی 24 کروڑ 10 لاکھ تک پہنچ گئی
0
64
pakistan population

مشترکہ مفادات کی مردم شماری نے آج وزیراعظم پاکستان کی زیر صدارت اپنے پہلے اجلاس میں پاکستان کی پہلی ڈیجیٹل مردم شماری کے نتائج کی اتفاق رائے سے منظوری دے دی-

باغی ٹی وی : ادارہ شماریات کے مطابق اجلاس میں تمام صوبوں کے وزیراعلیٰ ،وفاقی وزرا اور ادارہ شماریات سمیت دیگر متعلقہ محکموں کے حکام شریک ہوئے، اجلاس میں نئی مردم شماری سے متعلق معاملات پر غور کیا گیا،ذرائع کے مطابق وزارت منصوبہ بندی و ترقی نے ڈیجیٹل مردم شماری سے متعلق بریفنگ دی اور ڈیجیٹل مردم شماری کے نتائج پیش کیے 7ویں آبادی اور مکانات کی مردم شماری کی گئی مردم شماری یکم مارچ سے شروع ہوئی اور پاکستان کے شماریات کے بیورو کی رپورٹ کے مطابق 2.55 فیصد کی شرح نمو کے ساتھ پاکستان بھر میں 241.49 ملین افراد کو شمار کیا گیا ہے جلاس کو بتایا گیا ہے کہ پاکستان کی آبادی 24 کروڑ 10 لاکھ تک پہنچ گئی-

آبادی اور سالانہ شرح نمو کی انتظامی اکائی کے حساب سے تفصیل حسب ذیل ہے۔

عمران خان کی گرفتاری،علیمہ خان پارٹی کی قیادت کریں گی،نجی ٹی وی کے ذرائع کا …

ادارہ شماریات کے مطابق 1998 میں پاکستان کی آبادی 132.35 ملین ،2017 میں 207.68 ملین جبکہ 2023 میں 241.49 ملین تک پہنچ گئی ہے جبکہ پاکستان کی آبادی میں سالانہ شرح میں اضافہ بھی ہوا ہے جس میں ملک کی سالانہ آبادی میں 1998 میں 2.69 فیصد،جبکہ 2107 میں 2.40 فیصد اور 2023 میں 2.55 فیصد اضافہ ہوا ہے

آبادی میں اضافے کی شرح 2.55 فیصد ہے، ملک کی دیہی آبادی 61.18 فیصد جبکہ شہری آبادی 38.82 فیصد ہے۔

ملک میں سب سے زیادہ آبادی پنجاب میں 127.68 ملین ریکارڈ کی گئی ہے، صوبے میں آبادی کے اضافے کی شرح 2.53 فیصد ہے، پنجاب کی 59.30 فیصد آبادی دیہی جبکہ 40.70 فیصد شہری ہے،سندھ کی کل آبادی 55.69 ملین ریکارڈ کی گئی ہے، صوبے میں اضافے کی شرح 2.57 فیصد ہے، سندھ کی 46.27 فیصد آبادی دیہی اور 53.7 فیصد شہری ہے۔

خیبرپختونخوا کی کل آبادی 40.85 ملین ریکارڈ کی گئی ہے، صوبے میں اضافے کی شرح 2.38 فیصد ہے، خیبر پختونخوا کی 84.99 فیصد آبادی دیہی جبکہ 15.01 فیصد شہری ہے،بلوچستان کی کل آبادی 14.89 ملین ہے، صوبے میں اضافے کی شرح 3.20 فیصد ہے، بلوچستان کی 69.04 فیصد آبادی دیہی جبکہ 30.96 فیصد شہری آبادی ہے-

ملک میں سونےکی فی تولہ قیمت میں مزید اضافہ

اسلام آباد کی آبادی 2.36 ملین ریکارڈ کی گئی، وفاقی دارالحکومت میں اضافے کی شرح 2.81 فیصد ہے، اسلام آباد کی 53.10 فیصد آبادی دیہی جبکہ 46.90 فیصد آبادی شہری ہے۔

قبل ازیں مردم شماری کمشنر نے اس بات پر بھی روشنی ڈالی کہ پاکستان کی آبادی میں پچھلی مردم شماری کے بعد سے 49 ملین افراد (4.9 کروڑ) کا نمایاں اضافہ ہوا ہے جو کہ خاطر خواہ شرح نمو کی نشاندہی کرتا ہے۔

پی بی ایس نے فیلڈ سٹاف، شہریوں اور اسٹیک ہولڈرز بشمول صوبائی حکومتوں، حکومت گلگت بلتستان، آزاد ریاست جموں و کشمیر، پاکستانی فوج، نادرا، سپارکو، این ٹی آئی ایس بی، اور این ٹی سی کی ان کی غیر متزلزل حمایت پر گہری تعریف کی۔ اور مردم شماری کے پورے عمل میں سہولت پر شکریہ ادا کیا-

چئیرمین پی ٹی آئی کی گرفتاری ،حریم شاہ نے وڈیوز اپلوڈ کرنےکی دھمکی دیدی

جبکہ مردم شماری کے فیلڈ آپریشنز باضابطہ طور پر 15 مئی کو ختم ہوئے، ٹیبلٹس تک رسائی مخصوص اضلاع کے لیے 22 مئی 2023 تک کھلی رہی، تاکہ چیف منسٹر کمیٹی (CMC) کے فیصلے کے مطابق مکمل کوریج کو یقینی بنایا جا سکے۔ تاہم، صوبے، ضلع اور تحصیل کی سطح پر فراہم کی جانے والی تمام خدمات، جیسے مانیٹرنگ ڈیش بورڈز اور ٹیبلیٹ ڈیٹا انٹری، 22 مئی 2023 کو آدھی رات تک بند کر دی گئی تھیں۔

Leave a reply