پاکستان میں دو قومیں رہتی ہیں ایک ظالم دوسری مظلوم ہے ،خالد مقبول صدیقی

آپ کا حکمران چاہتا ہے کہ قوم عقیدے، مذہب اور مسلک کے نام پر تقسیم رہے،تاکہ ان کے مفادات محفوظ رہیں
0
124
khalid maqbool

کراچی: متحدہ قومی موومنٹ (ایم کیو ایم) پاکستان خالد مقبول صدیقی کاکہنا ہے کہ پاکستان میں دو قومیں رہتی ہیں ایک ظالم دوسری مظلوم ہے ہم مصلحتاً بھی منافقت نہیں کرنا چاہتے-

باغی ٹی وی: کراچی میں پاکستان ہاؤس میں منعقدہ پروگرام میں شرکاسے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی کا کہنا تھا کہ آپ ارادے کے ساتھ آئے ہیں اور ہم بھی ارادے کے ساتھ جڑے ہوئے ہیں امید ہےکہ آپ سب بھی نئے لوگوں کو تنظیم میں شامل کرائیں گے، ملک کے 4 صوبے ہیں جنکی شناخت لسانی ہے ان صوبوں کی تقسیم انگریز کر کے گیا ہے،آپ کا حکمران چاہتا ہے کہ قوم عقیدے، مذہب اور مسلک کے نام پر تقسیم رہے،تاکہ ان کے مفادات محفوظ رہیں۔

ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی کا کہنا ہے کہ بھٹو صاحب 1970ء میں پنجاب کی حمایت سے جیتے تھے اور حکومت بنائی تھی، مگر انہوں نے پنجاب میں کوئی پیکیج نہیں دیا، سندھ میں دیا پنجاب میں شہروں اور دیہات میں پنجابی بولنے والے رہتے ہیں، سندھ میں صورتِ حال مختلف ہے ایم کیو ایم لسانی نہیں قومی فکر رکھتی ہے، پاکستان میں دو قومیں رہتی ہیں ایک ظالم دوسری مظلوم ہے ہم مصلحتاً بھی منافقت نہیں کرنا چاہتے، 1987ء میں بلدیاتی انتخابات میں ایم کیو ایم نے 2 شہروں سے حصہ لیا اور کامیاب ہو گئی۔

‘یار بلوچ’ مجھے اونچی آواز میں صدر نہ کہو کہیں مولانا نہ سن لیں،آصف زرداری

یوکرین کا روس پر جوابی حملہ،14 افراد ہلاک

سال 2023 ایوی ایشن سیکٹر کے لیے تباہ کن رہا

Leave a reply