پاکستان میں ہونے والی حالیہ پیشرفت کا جائزہ لے رہے ہیں،آئی ایم ایف

0
20

عالمی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف) کا کہنا ہےکہ پاکستان میں ہونے والی حالیہ پیش رفت کا جائزہ لے رہے ہیں جبکہ وفاقی حکومت نے آئندہ مالی سال کے وفاقی بجٹ اورتین سالہ بجٹ سٹریٹیجی پیپرکا ابتدائی مسودہ تیار کرلیا ہے-

باغی ٹی وی : نمائندہ آئی ایم ایف ایسٹر پیریز کا کہنا ہےکہ بیرونی شراکت داروں کی جانب سے پاکستان کی مالی معاونت کے اعلان کا خیر مقدم کرتے ہیں، آئی ایم ایف بقیہ ضروری فنانسنگ کی یقین دہانیاں حاصل کرنےکا منتظر ہے پاکستان میں ہونے والی حالیہ پیشرفت کا جائزہ لے رہے ہیں، امید ہے آگے بڑھنےکا ایک پر امن راستہ تلاش کیا جائےگا۔

فرخ حبیب کا نام ای سی ایل سے نکالنے سے متعلق فیصلہ محفوظ

آئی ایم ایف کی ریذیڈنٹ نمائندہ ایسٹر پیریز نے اتوار کے روز کہا کہ 9ویں جائزے کیلئے ضروری بیرونی فنانسنگ میں کوئی تبدیلی نہیں کی گئی 9 ویں اقتصادی جائزے میں نظرثانی شدہ پالیسی فریم ورک پر عمل درآمد اہم ہوگا، فروری میں پیش کردہ منی بجٹ اور توانائی کی قیمتوں میں ایڈجسٹمنٹ اہم اقدامات ہیں، درآمدی پابندیوں میں کمی، مارکیٹ بیسڈ ایکسچینج ریٹ اور کمزور طبقے کی مدد معاشی استحکام کے لیے اہم ہیں شراکت داروں کی جانب سے مالی اعانت میکرو اکنامک استحکام کے دوبارہ حصول کے لیےکلیدی ہے۔

جبکہ وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے کہا کہ پروگرام کے 9 ویں جائزے کے لیے ہونے والی بات چیت، پاکستان اور آئی ایم ایف نے 6 ارب ڈالر کے فنانسنگ گیپ کی نشاندہی کی تھی۔ اب تک پاکستان نے 3 ارب ڈالر کا بندوبست کیا ہے اور بقیہ خلا کو پر کرنا باقی ہے، جس سے تعطل کا شکار بیل آؤٹ پیکج کی بحالی میں تاخیر ہو رہی ہے۔ سعودی عرب نے پاکستان کو 2 ارب ڈالر دینے کا وعدہ کیا ہے۔

یاسمین راشد کو سروسز اسپتال سے پولیس لائن اسپتال منتقل کر دیا گیا

دوسری جانب وفاقی حکومت نے آئندہ مالی سال کے وفاقی بجٹ اورتین سالہ بجٹ سٹریٹیجی پیپرکا ابتدائی مسودہ تیار کرلیا ہےبجٹ سازی سے متعلق آئی ایم ایف کے ساتھ آج سے مشاورتی عمل شروع ہوگاوفاقی حکومت نے آئندہ مالی سال کے وفاقی بجٹ اور تین سالہ بجٹ اسٹر یٹیجی پیپرکا ابتدائی مسودہ تیار کرلیا ہے۔

ذرائع وزارت خزانہ کے مطابق آئی ایم ایف ٹیم سے مشاورت کا عمل آئندہ ہفتے بھی جاری رہے گا، بجٹ اسٹرٹیجی پیپر آئندہ ہفتے وفاقی کابینہ میں پیش کیا جائے گابجٹ میں جی ڈی پی کا ہدف3.5 فیصد رکھنے کی تجویز ہےمہنگائی کی شرح کا ہدف21 فیصد مقررکرنے، ٹیکس وصولیوں کا ہدف 8879 ارب روپے تجویز کیا گیا ہے، جب کہ ٹیکس وصولیوں کو دیکھ کرگروتھ کا ٹارگٹ طے کیا جائے گا۔

مری: جنگلی بوٹی کھانے سے چار بچوں کی حالت غیر،ایک بچہ جاں بحق

Leave a reply