fbpx

ہم حاضر:ہم قربان:اے اہل بلوچستان:گوادرمیں پاک فوج کی طرف سے بارشوں اورسیلاب سے متاثرین کی مدد جاری

راولپنڈی:ہم حاضر:ہم قربان:اے اہل بلوچستان:گوادرمیں پاک فوج کی طرف سے بارشوں اورسیلاب سے متاثرین کی مدد جاری،اطلاعات کے مطابق پاک فوج ، نیوی اور ایف سی کے دستوں کا گوادر میں ریلیف اور ریسکیو آپریشن جاری جبکہ سیلاب سےمتاثرہ علاقوں میں نقصانات کا تخمینہ بھی لگایا جارہا ہے ۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق گزشتہ 96 گھنٹوں سے بلوچستان کی ساحلی پٹی شدید بارشوں کی زد میں ہے، پاک فوج ، نیوی اور ایف سی کے دستوں کا گوادر میں ریلیف اور ریسکیو آپریشن جاری ہے جبکہ کلانچ اور سردشت میں خصوصی امدادی سرگرمیاں شروع کی جا رہی ہیں ۔

آئی ایس پی آر کے مطابق متاثرین میں خیمے ، کمبل اورراشن ہیلی کاپٹر کے ذریعے پہنچائےگئے، سیلاب سے متاثرہ علاقوں میں نقصانات کا تخمینہ لگانے کا عمل بھی جاری ہے جبکہ پاک فضائیہ کے سی ون تھرٹی طیاروں کے ذریعے پسنی میں امدادی سامان پہنچایاگیا ۔

آئی ایس پی آر کے مطابق کلانچ، سردشت اور سن سٹار کی وادیوں اور دور دراز دیہات میں ریلیف کی خصوصی کوششیں جاری ہیں، گوادر کے پرانے علاقوں سے بھی پانی نکالنے کا عمل جاری ہے، آرمی ، ایف سی اور پاکستان کوسٹ گارڈ کی طرف سے متاثرین کے لئے میڈیکل کیمپس قائم کئے گئے ہیں جبکہ گوادر اولڈ ٹاؤن بھی پانی نکالنے کے آپریشن کا مرکز رہا ہے اورمتاثرہ علاقوں سے سیلابی پانی کو نکالنے پر توجہ دی جا رہی ہے ۔

ادھر کمشنرمکران ڈویژن شبیراحمدمینگل نے میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ مکران ڈویژن کے ضلع گوادر اور ضلع کیچ کے بیشتر علاقوں گوادرشہر ،سنٹسر ، پسنی اور ضلع کیچ کےسب تحصیل بلنگورمیں طوفانی بارشوں سے کافی نقصانات ہوئے ہیں اورلوگوں کے گھر زیرآب آگئے تھے جس کے نتیجے میں صوبائی حکومت کی جانب سے ضلع گوادراورکیچ کے سب تحصیل بلنگورکو آفت زدہ قراردیاہے،

انہوں نے کہا کہ لوگوں کی حفاظت اورکسی بھی ہنگامی صورتحال سے نمٹنے کیلئے مکران کے تینوں اضلاع کے ڈپٹی کمشنرز کو الرٹ رہنے اورضروری اقدامات کرنے کا حکم دے دیا گیاہے ، انہوں نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ تربت کے ڈپٹی کمشنرنے آج بھی دشت سمیت مختلف علاقوں کا دورہ کرکے امدادی سرگرمیوں اورنقصانات کا جائزہ لیاہے،جبک پی ڈی ایم اے کی جانب سے امدادی سامان بھی پہنچ چکے ہیں اور متاثرہ علاقوں میں امداد دینے کے لیے ہمارے پاس سامانوں کی کوئی کمی نہیں ہے اور ضرورت پڑنے پر مزید امدادی سامان بھی منگوائیں گے۔

انہوں نے کہا کہ اس سلسلے میں ضلعی انتظامیہ،پی ڈی ایم اے،لیویز،پولیس،پاک فوج،ایف سی ،تحصیل انتظامیہ ،نیوی سمیت تمام ادارے مکران ڈویژن کے سیلاب متاثرہ علاقوں میں امدادی کاموں میں مصروف عمل ہیں۔

انہوں نے کہا کہ اس حوالے سے ضلع کے افسران کی چھٹیاں بھی منسوخ کردیئے ہیں۔انہوں نے کیچ ،گوادرسمیت مکران کے عوام سے اپیل کی کہ کمزور بندات اورندیوں کے پاس کم از کم رات کو نہیں ٹھہریں اور محفوظ مقامات پر منتقل ہوجائیں ۔اگر کسی بھی ہنگامی صورتحال کا سامنا ہوا تو اپنے اپنے علاقوں کے انتظامیہ کو فوری طور پر اطلاع دیں تاکہ انہیں ریسکو اور امدادی سرگرمیاں وقت پر پہنچائی جاسکیں ۔

رکن صوبائی اسمبلی میر حمل کلمتی کی حالیہ طوفانی بارشوں سے ہونے والے نقصانات سے نمنٹے کے لئے پسنی میں ہنگامی اجلاس صدارت کی ۔ جس میں رکن صوبائی اسمبلی ثناء بلوچ کمشنر مکران شبیر جان مینگل ڈپٹی کمشنر گوادر کیپٹن ر جمیل احمد بلوچ اسسٹنٹ کمشنر پسنی محمد جان بلوچ اور دیگر مختلف محکموں کے آفیسران نے شرکت کی ۔

اسسٹنٹ کمشنر پسنی محمد جان بلوچ نے حالیہ طوفانی بارشوں سے متاثرہ علاقوں اور اب تک کی پیش رفت سے رکن صوبائی اسمبلی میر حمل کلمتی کو تفصیلی بریفینگ دی ۔ رکن صوبائی اسمبلی میر حمل کلمتی نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ

اس مشکل کی گھڑی میں پسنی کی عوام کے ساتھ ہوں ہم ہر ممکن کوشش اور اقدامات اٹھا رہے ہیں تاکہ لوگوں کو فوری ریلیف فراہم کر سکیں ۔ طوفانی بارشوں سے ہونی والی تباہی اور نقصانات کا جائزہ لے نقصانات کا فوری ازالہ کیا جائے گا ۔اس موقع پر انہوں نے پریس کلب پسنی کے سامنے بیھٹے احتجاجی میونسپل کمیٹی پسنی ڈیلی ویجیز ملازمین سے بھی ملاقات کی ۔

میونسپل کمیٹی پسنی کے ملازمین کو یقین دہانی کرائی کہ آپ کے تنخواہوں اور مستقل ملازمت کے مطالبے کو وزیراعلی بلوچستان اور اسمبلی میں آواز اٹھاؤں گا ۔

رکن صوبائی اسمبلی میرحمل کلمتی رکن صوبائی اسمبلی ثنا بلوچ کمشنر مکران شبیر احمد مینگل ڈپٹی کمشنر گوادر کپٹن ریٹائرڈ جمیل احمد بلوچ پسنی میں طوفانی بارشوں سے متاثرہ علاقوں کا دورہ کیا اور جائزہ لیا

Facebook Notice for EU! You need to login to view and post FB Comments!