ورلڈ ہیڈر ایڈ

گوادر: چینی کمپنی 23 سال کیلئے ٹیکس سے مستثنٰی،یہ فیصلہ کس نے اور کیوں کیا ؟

اسلام آباد: حکومت نے گوادر بندرگاہ پر صنعتی یونٹس قائم کرنے کے لیے چائنا اوورسیز پورٹس ہولڈنگ کمپنی (سی او پی ایچ سی) کو ٹیکس سے 23 سال تک کا استثنیٰ دے دیا۔یہ معاہدہ پاکستان کے حق میں ہے ، گھبرانے کی ضرورت نہیں‌ان خیالات کا اظہار علی حیدر زیدی نے پریس کانفرنس میں‌کیا

اب سعودی خواتین سرحدوں کی حفاظت کریں گی ، محمد بن سلمان کا انوکھا فیصلہ

چائنا اوورسیز پورٹس ہولڈنگ کمپنی کے چیف ایگزیکٹو افسر زینگ بزونگ اور وزیر اقتصادی امور حماد اظہر کے ساتھ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے علی حیدر زیدی کا کہنا تھا کہ کمپنی, جو کہ پہلے ہی گوادر بندرگاہ پر کام کررہی ہے، کو بندرگاہ پر مشینری اور آلات نصب کرنے کے لیے ٹیکس سے 23 سال کا استثنیٰ دیا جائے گا۔

آزادی نہیں فسادی مارچ ،توڑ پھوڑ کے منصوبے ، ریاست کے خلاف شرارت ہے ، شوکت یوسفزئی

علی حیدر زیدی کا کہنا تھا کہ یہ اقدام چینی مینوفیکچرنگ صنعت کی گوادر میں دوبارہ منتقلی اور اس میں مقامی مزدوروں کی شمولیت کے لیے اٹھایا گیا ہے، جس سے پاکستان کی معیشت کو تقویت ملے گی۔چینی کمپنی ایک ارب 95 کروڑ مالیت کا پلانٹ بھی لگائے گی جس سے سمندری پانی کو میٹھا کر کے یومیہ 5 ہزار گیلن پانی عوام کو فراہم کیا جائے گا۔

اقوام متحدہ بھی کنگال، پیسےمک گئے ،سیکرٹری جنرل نے پردہ چاک کردیا

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.