fbpx

پاکستان کو 40 سال کیلئے ایک فیصد شرح سود پر قرض ملا

اسلام آباد: سیلاب متاثرین کی بحالی کے لیے پاکستان کو 40 سال کے لیے ایک فیصد شرح سود پر قرض ملا ہے۔

باغی ٹی وی : جنیوا کانفرنس پر میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے سیکرٹری پلاننگ کمیشن ظفرعلی شاہ نے بتایا کہ رواں مالی سال کے دوران پاکستان کو 3 ارب ڈالر ملیں گے، آئندہ ماہ سے عالمی بینک، ایشیائی ترقیاتی بینک اور ایشیائی انفرااسٹرکچر اینڈ انویسٹمنٹ بینک سے بھی فنڈ آنا شروع ہوجائیں گے۔

امارات کا پاکستان کا دو بلین ڈالر قرض رول اوور کرنے جبکہ مزید 1 ارب ڈالر دینے کا…

سیکرٹری پلاننگ کمیشن ظفرعلی شاہ کا کہنا تھا کہ ان بینکوں نےقرض 40 سال کے لیے دیا ہے، قرض سیلاب زدگان کی امداد اور بحالی کے لیے ہے اور ایک فیصد شرح سود کے حساب سے دیا گیا ہے۔

کا کہنا تھا کہ حکومت سیلاب زدگان پر 3 سال کے دوران 8 ارب ڈالر خرچ کرےگی، سیلاب زدگان کی مددکے لیے حکومت اب تک ڈیڑھ ارب ڈالر خرچ کر چکی ہے حکومت کے آئی ایم ایف سے مذاکرات جاری ہیں، حکومت رواں مالی سال کے دوران گرتی شرح نموکنٹرول کرنےکی کوشش کرےگی۔

غیر ملکی زرمبادلہ کے ذخائر میں مزید کمی

دوسری جانب غیر ملکی زرمبادلہ کے ذخائر میں مزید 1 ارب 23 کروڑ ڈالر کی کمی ہوگئی ہے اسٹیٹ بینک کی جانب سے جاری اعداد و شمار کے مطابق زرمبادلہ ذخائر میں کمی غیر ملکی قرض کی ادائیگی کی وجہ سے ہوئی، 6 جنوری تک زرمبادلہ کے ذخائر 10 ارب 18کروڑ 78 لاکھ ڈالر رہے، اسٹیٹ بینک کے پاس 4 ارب 34 کروڑ 32 لاکھ ڈالر کے زرمبادلہ کے ذخائر رہے کمرشل بینکوں کے پاس 6 جنوری تک 5 ارب 84 کروڑ 46 لاکھ ڈالر رہے۔

وزیراعظم سے متحدہ عرب امارات کے سرمایہ کاروں کے وفد کی ملاقات