باہر کی اسمبلیوں میں تو کرسیاں چل جاتی ہیں،اٹارنی جنرل،پاکستان میں شاید اسمبلی کی کرسیاں اس لیے فکس ہیں،عدالت

باہر کی اسمبلیوں میں تو کرسیاں چل جاتی ہیں،اٹارنی جنرل،پاکستان میں شاید اسمبلی کی کرسیاں اس لیے فکس ہیں،عدالت

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق سینیٹ انتخابات اوپن بیلٹ پیپرز کے زریعے کرانے سے متعلق ریفرنس پر سماعت ہوئی

جسٹس عمر عطا بندیال نے کہا کہ سینیٹ میں اسمبلی کی طرح جھگڑے نہیں ہوتے تھے،جس دن یہ آبزرویشن دی تھی اسی دن جھگڑا ہو گیا،اٹارنی جنرل نے کہا کہ باہر کی اسمبلیوں میں تو کرسیاں چل جاتی ہیں، جسٹس اعجاز الاحسن نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ پاکستان میں شاید اسمبلی کی کرسیاں اس لیے فکس ہیں،

چیف جسٹس گلزار احمد نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ امریکی اسمبلی میں تو لوگوں نے گھس کر توڑ پھوڑ کی تھی،اس قسم کے واقعات پوری دنیا میں ہوتے ہیں،

چیف جسٹس نے سینیٹر رضا ربانی کو روسٹرم پر بلا لیا ،چیف جسٹس نے استفسار کیا کہ اوپن بیلٹ سے انتخابات کی مخالفت کیوں کر رہے ہیں؟ انتخابات صاف اور شفاف ہونے چاہییں بدیانت لوگوں کو منتخب نہیں ہونا چاہیے، رضا ربانی نے کہا کہ کوئی بھی سیاسی جماعت شفافیت کے سوال پر اعتراض نہیں کر رہی،چیف جسٹس نے کہا کہ چاہتے ہیں انتحابی عمل میں شفافیت ہو اور کرپشن ختم ہو،رضا ربانی نے کہا کہ عدالت میں سوال شفافیت نہیں بلکہ الیکشن کےطریقہ کار کا ہے،

چیف جسٹس گلزار احمد نے کہا کہ سیاسی جماعتیں شفافیت چاہتی ہیں تو جمعرات کو کیا ہوا تھا؟ اسمبلی میں تو بہت مختلف موقف سامنے آیا تھا، اٹارنی جنرل نے کہا کہ سیاسی جماعتیں جان بوجھ کر ریفرنس کا حصہ نہیں بنیں،رضا ربانی نے کہا کہ پیپلز پارٹی کا موقف سندھ حکومت کے ذریعے آچکا ہے، چیف جسٹس نے کہا کہ پارٹی اور حکومت دونوں مختلف باتیں ہیں،پارٹی حکومت اور حکومت پارٹی کی جانب سے جواب نہیں دے سکتی،

اٹارنی جنرل نے کہا کہ میں حکومت کا وکیل ہوں پی ٹی آئی کا نہیں،سپریم کورٹ نے کیس کی سماعت 10 فروری دن ایک بجے تک ملتوی کردی

پی ڈی ایم کو بڑا دھچکا،حکومت نے ایسا کام کر دیا کہ پی ڈی ایم کی ساری امیدوں پر پانی پھر گیا

نیب کی کارروائیاں ناقابل برداشت ہوتی جا رہی ہیں،اپوزیشن سینیٹ میں پھٹ پڑی

سینیٹ انتخابات اوپن بیلٹ کے ذریعے کرانے کا معاملہ،رضا ربانی بھی عدالت پہنچ گئے

سینیٹ انتخابات اوپن بیلٹ سے کروانے سے متعلق صدارتی ریفرنس،سپریم کورٹ میں سماعت،کس نے کی مہلت طلب؟

کوئی ایم پی اے پارٹی کیخلاف ووٹ دینا چاہتا ہے تو….سینیٹ انتخابات سے متعلق صدارتی ریفرنس کیس،عدالت کے ریمارکس

سیاسی پارٹیوں کے آپس کے معاملات ہوں توعدالت ان میں نہیں پڑتی،سپریم کورٹ

سینیٹ انتخابات، اوپن بیلٹ کے ذریعے ہو سکتے ہیں یا نہیں؟ الیکشن کمیشن نے جواب جمع کروا دیا

سینیٹ انتخابات سے متعلق صدارتی ریفرنس،سندھ‌ حکومت کا جواب عدالت میں جمع

سینیٹ انتخابات،پیپلز پارٹی نے ایسا اعلان کر دیا کہ مولانا حیران ہو گئے

سینیٹ میں ٹکٹ کیسے دیئے جائیں گے؟ وزیراعظم کا اعلان

سینیٹ الیکشن، ن لیگ کس کو دے ٹکٹ؟ امیدوار بیتاب ،قیادت پریشان

سینیٹ انتخابات میں ہارس ٹریڈنگ روکنے کیلئے کونسا قدم اٹھا لیا گیا؟

سینیٹ الیکشن اوپن بیلٹ کے ذریعے کرانے کے لیے جاری آرڈیننس سپریم کورٹ میں چیلنج

سینیٹ انتخابات، ٹکٹوں کی تقسیم،پیپلز پارٹی نے بڑا فیصلہ کر لیا

سینیٹ میں بیٹھے لوگ عوام کی نمائندگی نہیں کرتے،سینیٹر فیصل جاوید

قبل ازیں جمعیت علماء اسلام (ف) نے سینیٹ الیکشن اوپن بیلٹ سے کرانے کا صدارتی آرڈیننس سپریم کورٹ میں چیلنج کر دیا۔سینیٹ الیکشن اوپن بیلٹ سے کرانے کے صدارتی آرڈیننس کے خلاف درخواست ایڈووکیٹ جہانگیر جدون نے دائر کی۔ درخواست میں عدالت سے استدعا کی گئی کہ سپریم کورٹ صدارتی آرڈیننس جاری کرنے کا نوٹس لے، صدارتی آرڈیننس کو حکومت بدنیتی قرار دے کر کالعدم قرار دیا جائے، صدارتی آرڈیننس کو غیر معقول اور خلاف آئین قرار دیا جائے، صدارتی آرڈیننس کے ذریعے سپریم کورٹ، پارلیمنٹ کی خود مختاری کو سبوتاژ کیا گیا

سینیٹ ووٹنگ ،اپوزیشن جماعتیں آرڈیننس کے خلاف متحد،پیپلز پارٹی کا ن لیگ سے رابطہ

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.