fbpx

پاکستان تحریک انصاف نے اداروں کو اپنی حدود میں کھل کر کھیلنے کا موقع دیا ہے

پاکستان تحریک انصاف نے اداروں کو اپنی حدود میں کھل کر کھیلنے کا موقع دیا ہے۔ فیاض الحسن چوہان نے اپنی بیان میں کہا بزدار حکومت اداروں کی خود مختاری کے ذریعے گورننس میں بہتری لا رہی ہے۔

گزشتہ دور میں بلاوجہ سیاسی مداخلت سے اداروں کی تباہی سب دیکھ چکے۔ سیاسی چھیڑ چھاڑ سے آزاد محکمہ اینٹی کرپشن پنجاب میں تاریخی کامیابیاں سمیٹ رہا ہے۔

محکمہ اینٹی کرپشن نے بلا امتیاز کارروائیوں سے کرپشن کے ناسور کو قابو کیا ہے۔ ماضی کے برعکس بلا تخصیص کاروائیوں سے محکمہ اینٹی کرپشن پر عوام کا اعتماد بڑھا۔

2018 سے 2021 تک اینٹی کرپشن پنجاب نے مجموعی طور پر 227.33 ارب روپے کی ریکوریاں کیں۔ 196.65 ارب روپے کی سرکاری زمین قبضہ مافیا سے واگزار کرائی گئی۔

اس میں 24 ارب روپے کی قیمتی سرکاری زمین 43 ن لیگی ممبران، وُزرا اور مشیروں کے پاس تھی۔

ن لیگی "بیچاروں” نے سرکاری اراضی پر پلازے، سینما گھر، پٹرول پمپ وغیرہ بنا رکھے تھے۔

28.3 ارب روپے بالواسطہ اور 2.38 ارب روپے براہ راست قومی خزانے میں جمع کرائے گئے۔

یہ رقم سرکاری محصولات، ڈویلپمنٹ چارجز، نقشہ جات کی فیس وغیرہ کی مد میں حاصل ہوئی۔

ابھی تک محکمہ اینٹی کرپشن تقریباً 557194 کنال سرکاری زمین واگزار کرا چکی ہے۔ فیاض الحسن چوہان نے بتایا اوقاف کی 95026 کنال زمین میں سے 24920 کنال واگزار کرائی گئی۔ فیاض الحسن چوہان

اس قیمتی سرماری اراضی کی مالیت 5152.184 ملین روپے بنتی ہے۔محکمہ جنگلات کی 5997 ایکڑ زمین پر بیٹھے قبضہ گروپس کے خلاف کاروائیاں جاری ہیں۔

اینٹی کرپشن کی کرپٹ سرکاری اہلکاروں کے خلاف جاری مہم "چائے پانی” بھی کامیابی سے جاری ہے۔ گریڈ 1 تا 19 کے 675 افسران و اہلکاروں کو گرفتار، 10.85 ملین روپے کی ریکوریاں کی گئیں۔ فیاض الحسن چوہان

رپورٹ کرپشن ایپ پر 11488 شکایات موصول؛ 10606 کا ازالہ کیا جا چکا ہے۔رپورٹ کرپشن ایپ کے زریعے 2107 ملین روپے کی ریکوری ممکن ہوئی ہے۔

346 غیر قانونی پیٹرول پمپس کو سیل کیا گیا جبکہ 62 کو بند کردیا گیا یا گرا دئیے گئے۔

ٹیکنالوجی، بہتر گورننس اور موثر نگرانی کے عمل سے تمام محکموں کی سروس ڈیلیوری بہتر بنائی جا رہی ہے۔

ادارے خود مختار ہونگے تو ہی عوام کو ان کے مسائل کا فوری حل مل سکے گا۔ فیاض الحسن چوہان