سری لنکن سیکیورٹی وفد کی رپورٹ سامنے آگئی

لاہور: سری لنکن سیکیورٹی ٹیم نے کرکٹ بورڈ کو سیکیورٹی پر مثبت رپورٹ دی ہے، جس کے بعد ملک میں 10 سال بعد ٹیسٹ کرکٹ کی بحالی کے امکانات روشن ہوگئے ہیں.

تفصیلات کے مطابق سیکیورٹی ٹیم کی مثبت رپورٹ کے بعد سری لنکا نے پاکستان میں ٹیسٹ میچ کھیلنے پر غور شروع کردیا۔
سری لنکا کے سیکیورٹی وفد نے لاہور اور کراچی کا دورہ کرکے بورڈ کو انتہائی مثبت رپورٹ دی ہے جس کے بعد تمام چیزیں معمول کے مطابق ہونے پر پاکستان میں مارچ 2009 کے لاہور حملے کے بعد ٹیسٹ کرکٹ واپس آسکتی ہے۔ پاکستان اور سری لنکا کے درمیان ورلڈٹیسٹ چیمپئن شپ کی پہلی سیریز کو کسی نیوٹرل وینیو پر کھیلنے کی تجویز دی گئی تھی تاہم پاکستان کرکٹ بورڈ نے سری لنکن بورڈ کو یہ سیریز پاکستان میں کھیلنے کی پیشکش کی۔ سری لنکن کرکٹ بورڈ کے چیف ایگزیکٹو آفیسر ڈی سلوا کا اس حوالے سے کہنا ہےکہ انہیں اپنی سیکیورٹی ٹیم کی جانب سے انتہائی مثبت رد عمل ملا جس کے بعد ٹیم بھیجنے سے قبل پاکستان کرکٹ بورڈ سے کچھ متبادل صورت پر بھی بات کی جائے گی جب کہ اس حوالے سے حکومت سے بھی صلاح مشورہ کیا جائے گا۔ دوسری جانب ذرائع کا کہنا ہے کہ سری لنکا کے کچھ کھلاڑیوں نے پاکستان میں کھیلنے سے انکار کردیا ہے.

واضح رہے کہ اس سے قبل 2017 میں سری لنکن ٹیم ایک ٹی 20 میچ کھیلنے لاہور آئی تھی لیکن سری لنکن ٹیم کے زیادہ کھلاڑیوں نے پاکستان آنے سے انکار کردیا تھا.

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.